سندھ حکومت نے کورونا وائرس کو کنٹرول کرنے کے لیے ٹاسک فورس قائم کردی

سندھ حکومت نے کورونا وائرس کو کنٹرول کرنے کے لیے ٹاسک فورس قائم کردی

کراچی: وزیراعلیٰ سندھ کا کہنا تھا کہ گزشتہ شام کراچی میں کورونا وائرس کا ایک کیس سامنے آیا، متاثرہ مریض کے ساتھ 28 افراد ایران گئے تھے جب کی اسکریننگ کا فیصلہ کیا ہے

‘انڈس ہسپتال کورونا وائرس کے لیے مختص کر رہے ہیں، ہسپتال وینٹی لیٹرز منگوائے گا اور ہم انہیں پیسے ادا کردیں گے’۔
انہوں نے کہا کہ ‘ہمیں ماہرین، ڈس انفیکٹینٹس اور دیگر اشیا کی ضرورت ہے جس کو منگوانے کی ہدایت کردی ہے’۔
مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ ‘ان اشیا سے جو لوگ غلط فائدہ اٹھانا چاہیں گے ہم ان کے خلاف کارروائی کریں گے، کئی مینوفکچررز ڈریپ سے منظور شدہ نہیں ہیں تاہم انہیں مستثنیٰ قرار دے کر ان کو اجازت دے دی جائے گی’۔
انہوں نے کہا کہ ‘ایران سے آنے والی پرواز پر پابندی اب تک عائد نہیں کی گئی، حال ہی میں جو 1500 لوگ ایران سے آئے انہیں کہا ہے کہ اپنے گھر میں رہیں’۔
‘ان تمام 1500 افراد سے ایک تربیت یافتہ شخص بات کرے گا اور ان کو تجویز دی جائے گی کہ 15 روز تک اپنے گھروں میں رہیں اور اگر ان میں کوئی بھی نشانی سامنے آئی تو ان کے ٹیسٹ کیے جائیں گے’۔
مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ ‘ماسک دستیاب ہیں اسی لیے مہنگے ہوئے ہیں، اس کے تمام ڈسٹربیوٹرز، ویئر ہاؤسز کو دیکھیں گے’۔
انہوں نے کہا کہ ‘ایئرپورٹس پر اسکریننگ موثر طریقے سے کی جانی چاہیے تھی’۔
ان کا کہنا تھا کہ ‘سندھ میں ماسک اور دستانوں سمیت دیگر ضروری اشیا کی ذخیرہ اندوزی کرنے والوں کے خلاف کارروائی کریں گے’۔
وزیراعلیٰ کی زیر صدارت ایک اجلاس ہوا جس میں اس ٹاسک فورس بنانے کا فیصلہ کیا گیا۔
مذکورہ ٹاسک فورس وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی نگرانی میں ہوگی، جس میں چیف سیکریٹری، سیکریٹری صحت، کمشنر کراچی اور محکمہ صحت کے دیگر متعلقہ افسران شامل ہوں گے۔

یہ بھی پڑھیں

سکھر کے قرنطینہ سینٹر میں کورونا کے151 مریضوں میں سے 101 صحتیاب ہوگئے ہیں

سکھر کے قرنطینہ سینٹر میں کورونا کے151 مریضوں میں سے 101 صحتیاب ہوگئے ہیں

سکھر: ڈویژنل کمشنر شفیق مہیسر کا کہنا ہے کہ ہیلتھ پروٹوکول کے مطابق ان افراد …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے