کیا ماں ایسی بھی ہوتی ہے بیٹی کو30 مردہ گولڈ فش کھلادی۔

ٹوکیو: جاپان میں ماں نے طیش میں آکر اپنی نوعمر بیٹی کو 30 مردہ  گولڈ فش کھلادیں جو جاپان میں بچوں سے بڑھتے ہوئے برے رویے کی ایک مثال ہے۔

جاپان کے جنوب مغربی علاقے میں خاتون کی بیٹی نے مچھلی کے ٹینک میں غلطی سے واشنگ پاؤڈر ڈال دیا  جس سے تمام مچھلیاں ہلاک ہوگئی اس کے بعد غضب ناک ماں نے اپنی بیٹی کو ایک کے بعد ایک تمام مردہ مچھلیاں کھلادیں اس کی سخت سرزنش کی۔

واقعے کے بعد پولیس نے خاتون اور اس کے دوست کو گرفتار کرلیا جب کہ دونوں پر بچی کے منہ میں مچھلیاں ٹھونسنے کے ساتھ ایک الزام یہ بھی ہے کہ انہوں نے اس سے قبل نوعمر لڑکی کو رسیوں سے باندھ کر اس کے چہرے پر گھونسے مارے تھے اور سگریٹ سے اس کی زبان جلادی تھی۔

واضح رہے کہ جاپان میں والدین کی جانب سے بچوں پر بہیمانہ تشدد کا یہ پانچواں واقعہ ہے جب کہ پورے ملک میں اس کی شرح میں اضافہ ہورہا ہے۔ گزشتہ ماہ ایک جاپانی ماہ نے اپنی 3 سالہ بچی پر کھولتا ہوا گرم پانی انڈیل کر اسے ہلاک کردیا تھا۔  جاپانی وزارتِ دفاع کے مطابق گزشتہ سال مارچ سے اب تک بچوں پر تشدد اور زدوکوب کے 89 ہزار واقعات سامنے آئے ہیں۔ اس کے علاوہ جاپان میں بزرگ شہریوں پر بھی تشدد بڑھتا جارہا ہے۔ 2014 میں ایک نرسنگ ہوم کے ملازم نے 87 سالہ جاپانی کو بالکونی سے چار منزل نیچے گرادیا تھا جس سے وہ موقع پر ہلاک ہوگیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں

لبنانی حکومت کے اقتصادی اصلاحات کے پروگرام کی منظوری

لبنانی حکومت کے اقتصادی اصلاحات کے پروگرام کی منظوری

لبنانی صدر کے دفتر نے ملک کے اقتصاد کو بحران سے بچانے کے لئے وزیراعظم …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے