امریکی حکام نے کہا کہ ٹرمپ کیلیے مذہبی آزادی کا معاملہ بہت اہمیت رکھتا ہے

امریکی حکام نے کہا کہ ٹرمپ کیلیے مذہبی آزادی کا معاملہ بہت اہمیت رکھتا ہے

واشنگٹن: امریکی حکام نے ٹرمپ کی ممکنہ بات چیت کی تصدیق کردتے ہوئے کہ مودی مذہبی آزادی کی بات کرتے رہے ہیں اور اب دنیا یہ دیکھنا چاہتی ہے کہ بھارت میں ہر ایک کو مذہبی آزادی کا حق حاصل ہو جائے

امریکی صدر پاک بھارت تناؤ میں کمی پر بھی زور دیں گے، ٹرمپ مسئلہ کشمیر پر ثالِثی کی بھی پیشکش کریں گے۔
ٹرمپ کی گفتگو کے حوالے سے امریکی حکام کے بیان نے بھارت میں صف ماتم بچھا دی ہے، بھارتی اخبارات دی ہندو اور انڈیا ٹوڈے کے مطابق امریکی حکام کا کہنا ہے کہ ٹرمپ،
بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کے سامنے کشمیر کی صورتحال اور شہریت قانون پر اپنی تشویش کا اظہار کریں گے۔ ٹرمپ پاک بھارت تناؤ میں کمی پر بھی زور دیں گے۔
امریکی حکام نے کہا کہ ٹرمپ کیلیے مذہبی آزادی کا معاملہ بہت اہمیت رکھتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

اشرف غنی نے عید کے موقع پر500 طالبان قیدیوں کو رہا کرنے کا اعلان کردیا

اشرف غنی نے عید کے موقع پر500 طالبان قیدیوں کو رہا کرنے کا اعلان کردیا

کابل: افغان حکومت کی جانب سے مرحلہ وار طالبان قیدی رہا کیے جارہے تھے لیکن …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے