بدترین دور اب ختم ہوچکا ہے اور کاروباری شعبہ کا مسقبل روشن ہے

بدترین دور اب ختم ہوچکا ہے اور کاروباری شعبہ کا مسقبل روشن ہے

کراچی: اسٹیٹ بینک کے سربراہ کا کہنا تھا کہ ملک کے کاروباروں کا آپ کے سامنے بہت روشن مستقبل ہے تاہم انہوں نے نجی شعبے میں ترقی کے لیے پبلک سیکٹر میں اصلاحات کی ضرورت پر زور دیا

اقتصادی ترقی کو بڑھانے کے لیے اسٹیٹ بینک چھوٹے اور درمیانے کاروباری اداروں (ایس ایم ایز) کی ترقی کی متحرک طریقے سے حمایت کر رہا ہے۔
ساتھ ہی ان کا کہنا تھا کہ اسٹیٹ بینک اس بات کو یقینی بنائے گا کہ ایس ایم ایز بینکوں سے مالی معاونت حاصل کرنے کے اہل ہوں ساتھ ہی ملک کے ایوان صنعت و تجارت پر زور دیا کہ وہ چھوٹے اور درمیانے طبقے کے شعبوں میں اپنا کردار ادا کریں۔
اس بات کی طرف نشاندہی کی کہ رواں مالی سال کی پہلی ششماہی کے دوران ملک کی برآمدات میں 4.5 فیصد ترقی بڑھتی ہوئی معاشی پیداوار کی طرف اشارہ ہے۔
ڈاکٹر رضا باقر کا کہنا تھا کہ اسی عرصے کے دوران بھارت کی برآمدات 2.5کم، تھائی لینڈ 2.5 فیصد، سری لنکا 3.6 فیصد، انڈونیشیا 5 فیصد، ملائیشیا 6 فیصد اور بنگلہ دیش 7 فیصد کم ہوئی۔
پاکستان نے خطے کے مختلف ممالک میں کمی کے رجحان کے برعکس پاکستان نے حال ہی میں اپنی برآمدات میں اضافہ کیا۔
مرکزی بینک تجارت کے لیے الیکٹرانک اور ڈیجیٹل منی پر کام کر رہا ہے۔
سیمنٹ کی فروخت، مشینری کی درآمد اور بڑے پیمانے پر مینوفکچرنگ کے جنوری کے اعداد و شمار تبدیلی کی ابتدائی علامتیں ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

سکھر کے قرنطینہ سینٹر میں کورونا کے151 مریضوں میں سے 101 صحتیاب ہوگئے ہیں

سکھر کے قرنطینہ سینٹر میں کورونا کے151 مریضوں میں سے 101 صحتیاب ہوگئے ہیں

سکھر: ڈویژنل کمشنر شفیق مہیسر کا کہنا ہے کہ ہیلتھ پروٹوکول کے مطابق ان افراد …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے