سیہون دھماکے، تیسرے روز بھی کراچی میں ریڈ الرٹ

درگاہ لعل شہباز قلندر کے مزار میں دھماکے کے بعد کراچی میں آج تیسرے دن بھی ریڈالرٹ ہے، پولیس اور رینجرز نے اہم مقامات پر سیکیورٹی انتظامات سنبھال لیے ہیں، آئی جی سندھ نے پولیس کو24 گھنٹےالرٹ رہنے کی ہدایت کی ہے۔

عبداللہ شاہ غازی کے مزار کو کھول دیا ہے لیکن زائرین کو پارکنگ کی اجازت نہیں، عبداللہ شاہ غازی مزار پر رینجرز اور پولیس کے افسران موجود ہیں۔

شہر بھر میں پولیس کی جانب سے سیکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے ہیں جبکہ نوری شاہ بابا، جامع کلاتھ عالم شاہ، کیماڑی غائب شاہ مزار زائرین کے لیے بند ہے۔

سیکیورٹی خدشات کے پیشِ نظر مزار قائد کو بھی انتظامیہ کی جانب سے عوام کے لیے بند کردیا گیا ہے جبکہ مساجد، امام بارگاہوں،عوامی مقامات، شاپنگ مالز کی بھی سیکیورٹی سخت ہے۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ کراچی میں ایک شفٹ میں9 ہزار اہلکار ڈیوٹی دے رہے ہیں۔

سیہون دھماکے کے بعد آئی جی سندھ کا کہنا تھا کہ سیہون مزار کے لئے کوئی سیکیورٹی خطرہ نہیں تھا، سی سی ٹی وی کیمرے بھی ٹھیک کام کر رہے ہیں، گزشتہ ایک ہفتے سے پورا ملک دہشت گردی کی لپیٹ میں ہے۔ انہی حالات کے پیشِ نظر صوبے بھر میں سیکیورٹی سخت کی جارہی ہے۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز سیہون شریف میں حضرت لعل شہباز قلندر کی درگاہ پر خوفناک خودکش دھماکے میں 75 افراد شہید اور 150 کے قریب زخمی ہوگئے تھے۔ جاں بحق افراد میں 20 بچے، 9 خواتین، 45 مرد اور ایک پولیس اہلکار شامل ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

ساحلی علاقے صوبائی حکومت کے زیر انتظام لانے کا فیصلہ

ساحلی علاقے صوبائی حکومت کے زیر انتظام لانے کا فیصلہ

کراچی: قانونی مسودے کی سندھ اسمبلی سے منظوری کے بعد کراچی کے تمام ساحل سندھ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے