عام ممالک اپنے قونصل خانوں کو مذبح خانوں میں تبدیل نہیں کرتے: ایران

عام ممالک اپنے قونصل خانوں کو مذبح خانوں میں تبدیل نہیں کرتے: ایران

ایران کے وزیر خارجہ نے اس بات پر زور دیا ہے کہ عام ممالک اپنے قونصل خانوں کو مذبح خانوں میں تبدیل نہیں کرتے ہیں۔

اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے جمعہ کے روز اپنے ٹوئٹر پیج  پر سعودی عرب کے  وزیر مملکت برائے خارجہ امورعادل الجبیر کے بے بنیاد الزامات پر اپنے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ عام ممالک اپنے قونصل خانوں کو مذبح خانوں میں تبدیل نہیں کرتے، اپنے ہمسایوں پر حملہ نہیں کرتے، انسانی بحران کا باعث نہیں بنتے اور مذاکرات سے انکار نہیں کرتے اور ایران مذاکرات کے لئے کوئی پیشگی شرط  نہیں رکھتا۔

واضح رہے کہ سعودی عرب کے وزیر مملکت برائے خارجہ امورعادل الجبیرنے منگل کے روز ڈیووس میں ورلڈ اکنامک فورم میں بے بنیاد دعوی کرتے ہوئے ایران  پر دہشتگردی کی حمایت کا الزام عائد کیا اور کہا کہ جب ایران ایک عام ملک کی طرح موقف اپنائے تو ہم اپنے تعلقات کو بحال کرسکتے ہیں۔

بھارت: کالج میں مسلم طالبات کے برقعہ پہننے پر پابندی

یہ بھی پڑھیں

عراق میں امریکہ کے فوجی اڈے پر راکٹ حملہ

عراق میں امریکہ کے فوجی اڈے پر راکٹ حملہ

عراق کے صوبے نینوا کے شہر موصل سے 45 کیلو میٹر کے فاصلے پر واقع …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے