انسان سے انسان میں منتقل ہونے والے ایس اے آر ایس وائرس کی تصدیق

انسان سے انسان میں منتقل ہونے والے ایس اے آر ایس وائرس کی تصدیق

چین: کورونا وائرس پہلی مرتبہ ووہان کے علاقے میں سامنے آیا تھا جس کے تعلقات ایس اے آر ایس سے بتائے گئے ہیں جس نے 2002 اور 2003 میں چین اور ہانگ کانگ میں 650 افراد کی جان لے لی تھی

اس وائرس سے متاثر ہونے والے افراد کی کل تعداد بڑھ کر 218 ہوچکی ہے جبکہ چین کے بڑے شہر بیجنگ اور شنگھائی نے بھی اس وائرس کے کیسز کی تصدیق کردی گئی ہے۔
چین کے سرکاری نشریاتی ادارے سی سی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق جنوبی گوانگ ڈونگ صوبے میں درجن سے زائد افراد میں یہ وائرس سامنے آیا جبکہ ووہان شہر میں رواں ہفتے 136 نئے کیسز سامنے آئے ہیں۔
انسان سے انسان میں منتقل ہونے والے اس وائرس کو ایسے وقت میں دریافت کیا گیا ہے جب چین میں نئے سال کی خوشیاں منانے کے لیے دیگر ممالک سے لوگ بسوں، ٹرینوں اور طیاروں میں چین کا سفر کر رہے ہیں۔
آسٹریلیا، بنگلہ دیش، ہانگ کانگ، نیپال، سنگاپور، تھائی لینڈ، تائیوان اور امریکا میں بخار کی تشخیص سمیت حفاظتی اسکریننگ کے اقدامات اٹھائے جارہے ہیں جن کی زیادہ تر توجہ چینی شہر ووہان سے آنے والی پروازوں پر ہے جہاں سے یہ وائرس پھیلا ہے۔
صحت حکام کا کہنا ہے کہ ووہان کی ایک مچھلیوں کی مارکیٹ اس وائرس کے پھیلنے کا مرکز تھی جبکہ 89 سالہ شخص کی ہلاکت کے بعد اس وائرس سے مرنے والوں افراد کی کل تعداد 4 ہوگئی ہے جبکہ 15 میڈیکل اسٹاف بھی اس مرض میں مبتلا ہوچکا ہے۔
شنگھائی میں اب تک 2 کیسز کی تصدیق ہوچکی ہے جبکہ بیجنگ میں 5 افراد میں اس بیماری کی تشخیص ہوئی۔
یہ وائرس اب جاپان، تھائی لینڈ اور جنوبی کوریا بھی پہنچ چکا ہے جہاں ووہان کا دورہ کرنے والے 4 افراد ہسپتال میں داخل ہوچکے ہیں۔
آسٹریلیا کے صحت حکام کا کہنا تھا کہ اس بیماری کی نشانیاں ظاہر ہونے پر ایک شخص کو علیحدہ کردیا گیا ہے جبکہ اس کے ٹیسٹ کے نتائج آنے کا انتظار کیا جارہا ہے۔
چینی حکومت نے اعلان کیا ہے کہ وہ اس وائرس کے پھیلاؤ کو ایس آر اے ایس کی کیٹیگری میں شامل کر رہے ہیں جس کا مطلب ہے کہ جن افراد میں اس وائرس کی تشخیص ہو انہیں علیحدہ کیا جانا ضروری ہے اور ان کے سفر کو بھی روکا جانا ہے۔
چینی صدر شی جن پنگ کا کہنا تھا کہ ‘وائرس کو لازمی طور پر ایک جگہ بند کرنا ہوگا’۔

یہ بھی پڑھیں

مسلمانوں پرحملے روکنے میں ناکامی پر اپنی بے بسی کا اعتراف

مسلمانوں پرحملے روکنے میں ناکامی پر اپنی بے بسی کا اعتراف

نئی دہلی: وزیراعلی دہلی اروندکیجریوال آرایس ایس کے غنڈوں کو مسلمانوں پرحملوں سے روکنے میں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے