بےنظیرانکم سپورٹ پروگرام میں کرپشن کی تحقیقات کے لئے چیئرمین نیب سےرجوع

بےنظیرانکم سپورٹ پروگرام میں کرپشن کی تحقیقات کے لئے چیئرمین نیب سےرجوع

لاہور: بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام میں کرپشن کی تحقیقات کے لئے چیئرمین نیب سےرجوع کرلیاگیا، جوڈیشل ایکٹوازم پینل نےچیئرمین نیب، ڈی جی، صدر مملکت عارف علوی ،وزیراعظم عمران خان کوخط لکھ دیا ہے

بےنظیر انکم سپورٹ پروگرام میں کرپشن منظرعام پرآچکی ہے، غریب اورمستحق لوگوں کی رقم کرپٹ اورمنظورنظرافرادکودی گئی، پروگرام کےتحت کن کن لوگوں کورقم دی گئی تحقیقات کی ضرورت ہے۔
،خط میں مزید کہا گیا نادراکی حالیہ رپورٹ کےبعدمعاملےمیں ملوث افرادکی نشاندہی ضروری ہے اور استدعا کی گئی کہ چیئرمین نیب کرپٹ افرادکی نشاندہی کےلیےانکوائری کاحکم دیں۔
خط کی کاپی صدرپاکستان،وزیر اعظم اورصوبائی وزرائےاعلیٰ کوبھی بھیجی گئی ، خط میں کہا گیا گریڈ17 سے21کے2543افسران انکم سپورٹ پروگرام سے مستفید ہوئے، متعدداعلیٰ سرکاری افسران بیویوں کےنام پرپیسےوصول کرتےرہے۔
خط کے متن میں کہا گیا بلوچستان میں زیادہ سرکاری افسران بی آئی ایس پی سےمستفیدہوئے، بلوچستان سے741سرکاری افسران اور سندھ میں گریڈ18 کے 342افسران نے بی آئی ایس پی سےفائدہ اٹھایا۔
خط میں بتایا گیا گریڈ 21 کے3 اورگریڈ 20 کے 59 افسران نے فائدہ اٹھایا، ریکارڈ کے مطابق گریڈ19کےافسران کی تعداد429 ہے جبکہ انکم سپورٹ پروگرام کے6افسران،گریڈ17کے1240 افسران نےفائدہ اٹھایا۔

یہ بھی پڑھیں

سلمان شہباز کے ملازمین کے بینک اکاؤنٹ میں بھی 9.5 ارب روپے کا انکشاف

سلمان شہباز کے ملازمین کے بینک اکاؤنٹ میں بھی 9.5 ارب روپے کا انکشاف

لاہور: ملازمین رمضان شوگر مل اور العریبیہ شوگر مل میں کام کرتے ہیں ایف آئی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے