بلوچستان کی تاریخ میں شاید اس سے پہلے اتنی برف باری نہیں ہوئی

بلوچستان کی تاریخ میں شاید اس سے پہلے اتنی برف باری نہیں ہوئی

کوئٹہ: وزیر اعلیٰ بلوچستان نےگفتگو کرتے ہوئے کیا، ان کا کہنا تھا کہ متاثرہ علاقوں میں درجہ حرارت منفی 14 سے 15 ڈگری سینٹی گریڈ ہے، کان مہتر زئی برف باری سے شدید متاثر ہے، بلوچستان میں سب سے زیادہ برف باری کان مہتر زئی میں ہوئی ہے

صوبے میں مشکل صورت حال کا سامنا ہے، تمام متعلقہ ادارے ریسکیو آپریشن میں مصروف ہیں، پھنسے ہوئے افراد کو نکالنے کے لیے تمام دستیاب وسائل استعمال کیے، بلوچستان میں غیر متوقع بارشیں اور برف باری ہوئی ہے، گزشتہ 2 دن سے شدید برف باری کا سلسلہ جاری ہے، پی ڈی ایم اے کے ذریعے متاثرہ علاقوں میں امدادی سامان پہنچایا گیا۔
جام کمال کے مطابق شدید برف باری سے متاثرہ کچھ راستوں کو بحال کر دیا گیا ہے، جب کہ بند سڑکیں بحال کرنے کے لیے کارروائیاں جاری ہیں۔
گزشتہ روز وزیر اعلیٰ بلوچستان نے وزیر داخلہ کے ہم راہ بارش اور برف باری سے متاثرہ علاقوں کا فضائی جائزہ بھی لیا، انھوں نے ریسکیو ٹیموں کو دور دراز علاقوں میں سہولیات کی فراہمی کے لیے ہیلی کاپٹرز کے استعمال کی ہدایت کی۔

یہ بھی پڑھیں

وزیر اعلیٰ ہاؤس تک عام عوام کی رسائی تو دور کی بات ہے وہاں اراکین اسمبلی تک کے لیے جانا مشکل ہے

وزیر اعلیٰ ہاؤس تک عام عوام کی رسائی تو دور کی بات ہے وہاں اراکین اسمبلی تک کے لیے جانا مشکل ہے

بلوچستان: جتنی بھی حکومتیں آئی ہیں ان میں سے یہ بدترین حکومت ہے اس لیے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے