ای سی ایل میں نام شامل کرنے کا میمورنڈم بنیادی حقوق کی خلاف ورزی ہے

ای سی ایل میں نام شامل کرنے کا میمورنڈم بنیادی حقوق کی خلاف ورزی ہے

لاہور:ہائی کورٹ میں اپنا نام ای سی ایل سے نکالنے کے لیے ایک اور درخواست دائر کردی۔ درخواست میں وزارت داخلہ، ڈی جی ایف آئی اے اور چیئرمین نیب سمیت دیگر کو فریق بنایا گیا ہے

موقف اختیار کیا گیا ہے کہ ان کا نام بغیر نوٹس دئیے ای سی ایل میں شامل کیا گیا، ای سی ایل میں نام شامل کرنے کا میمورنڈم بنیادی حقوق کی خلاف ورزی ہے۔
درخواستگزار نے عدالت سے استدعا کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت کو نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم دیا جائے اور نام ای سی ایل میں شامل کرنے کا میمورنڈم غیر آئینی اور غیر قانونی قرار دے کر کالعدم کیا جائے۔ اس کے علاوہ درخواست کے حتمی فیصلے تک ایک بار 6 ہفتوں کے لئے مریم نواز کو بیرون ملک جانے کی اجازت دی جائے۔

یہ بھی پڑھیں

فواد چوہدری نے مریم نواز کو سالگرہ کی مبارکباد

فواد چوہدری نے مریم نواز کو سالگرہ کی مبارکباد

فیصل آباد: وفاقی وزیر فواد چوہدری نے (ن) لیگ کی نائب صدر کو سالگرہ کی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے