حفیظ جالندھری کی آج 37ویں برسی منائی جارہی ہے

حفیظ جالندھری کی آج 37ویں برسی منائی جارہی ہے

کراچی: قومی ترانے کے خالق حفیظ جالندھری کی آج 37ویں برسی منائی جارہی ہے، انہوں نے اپنے قلم سے ہمیشہ نظریہ پاکستان کی حفاظت اور اشاعت کے لیے تحاریر لکھیں

14 جنوری 1900 کو بھارتی شہر جالندھر میں پیدا ہونے والے حفیظ جالندھری نے رومانوی، مذہبی، ملی، اور فطری موضوعات پر تحریریں پیش کیں تاہم ان کا سب سے بڑا کارنامہ چار جلدوں پر مشتمل شاہنامہ اسلام ہے۔
حفیظ جالندھری تحریک پاکستان کے سرگرم کارکن تھے
حفیظ جالندھری کے قومی ترانوں اور ملی نغموں نے قوم کا مورال ہمیشہ بلند کیا، حکومت پاکستان نے ان کی ادبی خدمات کے اعتراف میں انہیں ‘پرائڈ آف پرفارمنس’ اور ‘ہلال امتیاز’ سے نوازا۔
آپ 21 دسمبر1982ء کو اس جہاں فانی سے کوچ کر گئے۔

عرش کی رخصت لیے بیٹھا ہوں فرش خاک پر
سر مرا آسودہ ہے پائے رسولِ پاکؐ پر

یہ بھی پڑھیں

سینئر سرکاری عہدیداروں نے 1976 کے ڈرگ ایکٹ کی خلاف ورزی

سینئر سرکاری عہدیداروں نے 1976 کے ڈرگ ایکٹ کی خلاف ورزی

کراچی: سینئر عہدیداروں نے عام لوگوں کو فائدہ پہنچانے کے لیے ڈریپ کے کام کو …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے