’ہفتے میں چار بار لال مرچیں استعمال کرنے والوں کو ہارٹ اٹیک کا خطرہ کم

’ہفتے میں چار بار لال مرچیں استعمال کرنے والوں کو ہارٹ اٹیک کا خطرہ کم

نیویارک: جرنل آف دا امریکن کالج آف کارڈیالوجی میں شائع ہونے والی تحقیقی نتائج میں بتایا گیا ہے کہ جو لوگ ہفتے میں چار بار سرخ مرچ استعمال کرتے ہیں انہیں ہارٹ اٹیک کا خطرہ چالیس فیصد کم ہوجاتا ہے

تحقیقی نتائج میں بتایا گیا ہے کہ مطالعے میں 23 ہزار ایسے لوگوں کا ڈیٹا اکھٹا کیا گیا جو 8 سال سے کھانوں میں مرچیں استعمال کررہے ہیں۔
نتائج میں یہ بات سامنے آئی کہ ’ہفتے میں چار بار لال مرچیں استعمال کرنے والوں کو نہ صرف ہارٹ اٹیک کا خطرہ کم ہوا بلکہ اُن کی جلدی موت کا خطرہ بھی کم ہوگیا‘۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ لال مرچیں استعمال کرنے والوں میں ہر قسم کے لوگ موجود تھے جن میں سے کچھ کی خوراک نہ صحت مندانہ جبکہ بقیہ کی ناقص تھی۔
تحقیقی نتائج میں یہ بات سامنے آئی کہ ’لال مرچ میں اینٹی انفلیمینٹری کمپاؤنڈ پایا جاتا ہے جو جلن کا تو احساس پیدا کرتا ہے مگر یہی دل کے عارضے اور دیگر خطرناک امراض سے انسان کو محفوظ رکھتا ہے‘۔
جو لوگ معمول کے مطابق لال مرچ ، پھل اور سبزیاں استعمال کرتے ہیں وہ دیگر کے مقابلے میں کم بیمار رہتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

فیس ماسکس سے کیسے وائرس کو پھیلنے سے روکنے میں کیسے مدد مل سکتی ہے

فیس ماسکس سے وائرس کو پھیلنے سے روکنے میں کیسے مدد مل سکتی ہے

وائرس سب سے پہلے ناک کے اندرونی نظام کو متاثر کرتا ہے اور پھر زیریں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے