گھریلوصارفین کو گیس کی کم پریشرکی شکایات

گھریلوصارفین کو گیس کی کم پریشرکی شکایات

کراچی:  ساتوں صنعتی علاقوں میں قائم صنعتوں کوگیس پریشر میں کمی کا سامنا ہے جب صنعتکار گیس پریشر میں کمی کی وجوہات کے بارے میں استفسار کرتے ہیں تو انہیں بلوچستان میں گیس کی طلب بڑھنے کا جواز پیش کیا جاتا ہے

گیس پریشر نہ ہونے کی وجہ سے ساتوں انڈیسٹریل زونزمیں قائم صنعتوں کی پیداواری سرگرمیاں بری طرح متاثر ہورہی ہیں جس سے برآمدی آرڈرز کی مقررہ مدت میں تکمیل ناممکن ہوگئی ہے، ضرورت اس امرکی ہے کہ وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ گیس پریشر میں کمی کے اس سنگین معاملے کا فوری نوٹس لیں، سردی کی شدت بڑھتے ہی کراچی کے مختلف علاقوں میں بھی گیس پریشر کمی کی شکایات بڑھ گئی ہیں۔
گلشن اقبال بلاک 19، نیوکراچی سیکٹر فائیو ڈی، فائیو ای، ماڈل کالونی، ملیر، گلستان جوہر میں گیس کی لوڈ شیڈنگ کی جاری ہے جب کہ شہر کے بیشترعلاقوں میں گھریلوصارفین کوبھی گیس کی کم پریشرکی شکایات ہیں۔
ایس ایس جی سی حکام کا کہنا ہے کہ موسم سرد ہوتے ہی گیس کی طلب 1400 سے 1450 ملین مکعب فٹ تک جاپہنچی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ گیس فیلڈ سے 1150 سے 1160 ملین مکعب فٹ گیس سپلائی ہورہی ہے،گیس کا شاٹ فال 300 ملین مکعب فٹ سے بھی تجاوز کرگیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

پہلی سہ ماہی میں براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری 24فیصد کی کمی واقع ہوئی

پہلی سہ ماہی میں براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری 24فیصد کی کمی واقع ہوئی

کراچی: اسٹیٹ بینک کے اعدادوشمار سے پتہ چلتا ہے کہ مالی سال 2021 میں جولائی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے