اٹلی میں ہوٹل پر برفانی تودہ گرنے سے’ متعدد افراد لاپتہ

اٹلی میں امدادی کارکنوں کے مطابق ابروتزو کے علاقے میں زلزلے کے بعد ایک ہوٹل پر برفانی تودہ گرنے سے متعدد افراد لاپتہ ہو گئے ہیں۔

ابرتزو کے علاقے میں بدھ کو زلزلہ آیا تھا اور خیال کیا جارہا ہے یہی برفانی تودہ گرنے کا سبب بنا ہے۔

کوہ گرین سسو کے قریب واقع اس ہوٹل میں بدھ کی رات سے امدادی کارروائیاں جاری ہیں۔

ریسکیو ٹیم کے سربراہ انتونیو کروسیتا کا کہنا ہے کہ’بہت ساری ہلاکتیں ہوئی ہیں۔‘

مقامی میڈیا کے مطابق ہوٹل میں تین بچے بھی قیام پذیر تھے اور ہلاک ہونے والوں افراد میں یہ بھی شامل ہیں۔

تاہم دیگر حکام کا کہنا ہے کہ ابھی ہلاکتوں کے بارے میں کچھ کہنا قبل از وقت ہو گا۔

حکام کے مطابق جس وقت ہوٹل پر تودہ گرا وہاں 20 سیاح اور ہوٹل کے عملے کے سات ارکان موجود تھے۔

امدادی کارکنوں کا کہنا ہے کہ دو افراد کو زندہ بچا لیا گیا ہے کہ جبکہ باقی اب بھی برف تلے دبے ہیں۔

فائر بریگیڈ کے ترجمان کے مطابق امدادی کارکنوں کو ہیلی کاپٹر کے ذریعے متاثرہ مقام پر اتارا گیا ہے اور انھوں نے وہاں امدادی کارروائیاں شروع کر دی ہیں۔

برفانی تودے سے چھت کا کچھ حصہ گر گیا اور مقامی افراد نے فرنڈولا میں امدادی ہنگامی سروسز کو مطلع کیا۔

تاہم برفباری کے باعث امدادی کارکنوں کو ہوٹل تک پہنچنے میں مشکلات کا سامنا رہا اور اطالوی میڈیا کا کہنا ہے کہ امدادی کارکن مقامی وقت کے مطابق منگل کی صبح چار بجے پہنچے۔

خیال رہے کہ وسطی اٹلی کے اس پہاڑی علاقے میں بدھ کو چار بار زلزلہ آیا تھا اور اس کے بعد میں ہلکے جھٹکے محسوس کیے جاتے رہے تھے۔

یہ زلزلہ ایک ایسے وقت میں آیا جب ابروتزو، مارشے، لازیو کے علاقے میں کئی دنوں سے شدید برفباری جاری ہے۔

بہت سارے دیہات تک رسائی میں بھی مشکلات درپیش ہیں۔

علاقے میں پہلے ہی ایک شخص لاپتہ اور ایک اور شخص کی ہلاکت کی اطلاعات تھیں۔

گذشتہ سال اگست میں اسی علاقے میں آنے والے زلزلے میں 298 افراد کی ہلاکت ہوئی تھی۔

یہ بھی پڑھیں

بھارت میں جنسی زیادتی میں ملوث رکن اسمبلی نے خود کو پولیس کے حوالے کردیا

اتر پردیش:  جنسی زیادتی میں ملوث سماج پارٹی کے رکن اسمبلی اٹل رائے نے خود …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے