کراچی سے کوئٹہ اور مالاکنڈ میں اب تک ایسے 9 اکاؤنٹس کی نشاندہی

کراچی سے کوئٹہ اور مالاکنڈ میں اب تک ایسے 9 اکاؤنٹس کی نشاندہی

اسلام آباد: محکمہ ٹیکس کے ایک عہدیدار نے بتایا کہ ایف بی آر نے ایک شخص کو شناخت کرلیا ہے جس کے نام پر اکاؤنٹس کھولے اور آپریٹ کیے گئے

کوئٹہ کے بینک اکاؤنٹس سے رقم مالاکنڈ ڈویژن کے علاقے بٹخیلہ کے اکاؤنٹس میں منتقل کی گئی جو سال 2014 سے 2018 تک خیبرپختونخوا کا ٹیکس سے مستثنیٰ علاقہ تھا۔
محکمہ ٹیکس کے عہدیدار نے بتایا کہ کراچی سے کوئٹہ اور مالاکنڈ میں اب تک ایسے 9 اکاؤنٹس کی نشاندہی ہوئی ہے جو ٹیکس چوری اور ذرائع آمدن چھپانے کے لیے باہم منسلک تھے۔
اس سے قبل محکمہ انٹیلیجنس نے بینک اکاؤنٹس میں 20 ارب روپے کی غیر قانونی منتقلی اور ٹیکس ادا کیے بغیر اسے مالاکنڈ میں نکالے جانے کے اسکینڈل سے پردہ اٹھایا تھا۔
بینک اکاؤنٹس میں غیر قانونی طور پر منتقل کی گئی اور نکالی گئی کُل رقم 25 ارب روپے سے زائد تک جا پہنچی ہے۔
عہدیدار کے مطابق محکمہ ٹیکس انٹیلیجنس اس نتیجے پر پہنچا کہ رقم کی منتقلی کا مقصد ٹیکس سے بچنے کے لیے دولت کو اِدھر سے اُدھر بھیجنا تھا۔
ان کا کہنا تھا کہ ایف بی آر اس نیٹ ورک سے منسلک دیگر ملزمان کی نشاندہی کرنے کے لیے مزید تحقیقات کر رہا ہے۔
محکمہ ٹیکس ان ملزمان سے ذرائع آمدن کی تفصیلات طلب کرے گا جبکہ یہ بات بھی سامنے آئی تھی کہ ان افراد کا ملک کے ٹیکس گوشواروں میں اندراج نہیں اور انکم ٹیکس ڈیپارٹمنٹ میں ان افراد کا کوئی ریکارڈ بھی میسر نہیں جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ منتقل کی گئی دولت ظاہر ہی نہیں کی گئی تھی۔

یہ بھی پڑھیں

نیپرا بجلی کے نرخوں میں ایک روپے 62 پیسے اضافے کی منظوری

نیپرا بجلی کے نرخوں میں ایک روپے 62 پیسے اضافے کی منظوری

اسلام آباد: نیپرا کے ایک ترجمان نے کہا کہ ریگولیٹر کے نئے نرخ وفاقی حکومت …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے