گٹکااورمین پوری بل کوحتمی شکل دیدی،جلداسمبلی سے منظوری کے بعدنافذ کردیاجائیگا

گٹکااورمین پوری بل کوحتمی شکل دیدی،جلداسمبلی سے منظوری کے بعدنافذ کردیاجائیگا

کراچی: بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے قائمہ کمیٹی برائے قانون و انصاف کے اجلاس میں تجویز دی ہے کہ گٹکا مین پوری بنانے والوں کے لیے 10 سال قید کی سزا رکھی جائے

سندھ اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے قانون اور انصاف میں اراکین کو بتایا کہ صوبہ بھر میں گٹکا اور مین پوری کے استعمال اور تیاری پر مکمل پابندی لاگو ہوگی، انسدادگٹکا اور مین پوری بل میں سخت سزاؤں کی تجاویز پیش کی گئی ہیں، انسداد گٹکا اور مین پوری بل کو حتمی شکل دے دی گئی ہے جسے اسمبلی میں پیش کرنے اور منظوری کے بعد صوبہ بھر میں نافذ العمل کردیا جائے گا، شہری آگے بڑھ کر حکومتی اقدامات کا ساتھ دیں اور عوام کی جانوں اور صحت سے کھیلنے والے سماج دشمن عناصر کی نشاندہی کریں۔
بل میں اس امر کا خصوصی خیال رکھا گیا ہے کہ گٹکا اور مین پوری کے قانون کا غلط استعمال نہ کیا جائے اور اگر پولیس کی جانب سے اس کو غلط استعمال کیا گیا تو ان پولیس اہلکاروں کے لیے 3 سال قید کی سزا تجویز کی گئی ہے

یہ بھی پڑھیں

سینئر سرکاری عہدیداروں نے 1976 کے ڈرگ ایکٹ کی خلاف ورزی

سینئر سرکاری عہدیداروں نے 1976 کے ڈرگ ایکٹ کی خلاف ورزی

کراچی: سینئر عہدیداروں نے عام لوگوں کو فائدہ پہنچانے کے لیے ڈریپ کے کام کو …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے