7 قطری باشندوں کو تلور کے شکار کے لیے نوشکی میں داخل ہوتے ہوئے گرفتار کرلیا

7 قطری باشندوں کو تلور کے شکار کے لیے نوشکی میں داخل ہوتے ہوئے گرفتار کرلیا

کوئٹہ: قطری شہری پیر کی شام نوشکی کی جانب سفر کررہے تھے جہاں انہیں کوئٹہ نوشکی شاہرہ کی گلنگور چیک پوائنٹ پر لیویز اہلکاروں نے روک کر حراست میں لیا

قطری شہری پیر کی شام نوشکی کی جانب سفر کررہے تھے جہاں انہیں کوئٹہ نوشکی شاہرہ کی گلنگور چیک پوائنٹ پر لیویز اہلکاروں نے روک کر حراست میں لیا
ڈپٹی کمشنر کا کہنا تھا کہ ’قطر کے حکمراں خاندان کے 4 افراد سمیت دیگر قطری شہری دفتر خارجہ کے جاری کردہ شکار کے لائسنس کے بغیر تلور کا شکار کرنے کے لیے علاقے میں داخل ہورہے تھے‘۔
ان کا مزید کہنا تھا کہ اہلکاروں نے حراست میں لیے گئے ان افراد کو محکمہ جنگلی حیات کے حکام کے حوالے کردیا جنہوں نے ان غیر ملکیوں کے خلاف مقدمہ درج کرلیا۔
قطری شاہی خاندان سے تعلق رکھنے والے 4 افراد کی شناخت شیخ محمد بن منصور جاسم، شیخ خالد بن علی، شیخ عبداللہ بن جاسم اور شیخ احمد بن خالد کے نام سے ہوئی۔
ابتدائی تفتیش کے دوران یہ بات سامنے آئی کہ قطری شہری 2 دسمبر کو کوئٹہ پہنچے تھے جن کے پاس 3 ماہ کا ویزا تھا۔

یہ بھی پڑھیں

انور جان کھیتران 23 جولائی بلوچستان کے علاقے بارکھان میں فائرنگ کر کے ہلاک کیا

انور جان کھیتران 23 جولائی بلوچستان کے علاقے بارکھان میں فائرنگ سے ہلاک

 بلوچستان: ان کی ہلاکت کے خلاف سب سے بڑا احتجاجی مظاہرہ بارکھان میں اسی جگہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے