جاپان کی غیر سرکاری تنظیم کے سربراہ کی گاڑی پر حملہ

ننگرہار: افغانستان میں صحت عامہ کے لیے متحرک جاپان کی غیر سرکاری تنظیم کے سربراہ کی گاڑی پر حملہ کیا گیا ہے جس کے نتیجے میں ڈاکٹر ٹیٹسو ناکامورا اپنے ڈرائیور اور 4 باڈی گارڈز کے ہمراہ ہلاک ہوگئے

افغانستان کے مشرقی صوبے ننگرہار میں جاپان سے تعلق رکھنے والی ایک این جی او کی گاڑی پر فائرنگ کی گئی ہے جس کے نتیجے میں گاڑی میں موجود این جی او ’پیس میڈیکل سروس‘ کے سربراہ ڈاکٹر ٹیٹسو ناکامورا شدید زخمی ہوگئے جب کہ حملے میں اُن کے ڈرائیور اور 4 باڈی گارڈز موقع پر ہی ہلاک ہوگئے۔
افغانستان کے مشرقی صوبے ننگرہار میں جاپان سے تعلق رکھنے والی ایک این جی او کی گاڑی پر فائرنگ کی گئی ہے جس کے نتیجے میں گاڑی میں موجود این جی او ’پیس میڈیکل سروس‘ کے سربراہ ڈاکٹر ٹیٹسو ناکامورا شدید زخمی ہوگئے جب کہ حملے میں اُن کے ڈرائیور اور 4 باڈی گارڈز موقع پر ہی ہلاک ہوگئے۔
ننگر ہار کی صوبائی کونسل کے ایک رُکن سہراب قادری کا کہنا ہے کہ حملہ آور فائرنگ کرکے فرار ہوگئے جن کی تلاش میں چھاپہ کار کارروائیاں جاری ہیں، تاحال کسی گروپ نے واقعے کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔ طالبان ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے ٹویٹر پر اپبے بیان میں واقعے سے لاتعلقی کا اظہار کرتے ہوئے واقعے میں ملوث ہونے کی تردید کی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

صدر رجب طیب اردوان نے فرانس کے صدر ایمانیئول میکرون’دماغی معائنہ‘ کرانے کے لیے زور دیا ہے

صدر رجب طیب اردوان نے فرانس کے صدر ایمانیئول میکرون’دماغی معائنہ‘ کرانے کے لیے زور دیا ہے

استنبول: ترک صدر رجب طلب اردوان سے سخت ردعمل دیا تھا ہفتے کو کہا تھا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے