خطرے میں پھنسے جانوروں کے بچاؤ کے لیے موبائل فون ایپلیکیشن کا آغاز

خطرے میں پھنسے جانوروں کے بچاؤ کے لیے موبائل فون ایپلیکیشن کا آغاز

اسلام آباد: ایس او ایس کے مطابق پاکستان میں جانوروں کے بچاؤ کے لیے یہ پہلی ریسکیو ایپلیکیشن ہے۔ یہ ایپ خطرے اور مشکل میں مبتلا جانوروں کی صحیح جگہ کا پتہ لگائے گی اور قریبی رضاکاروں کو فوری مدد فراہم کرنے کی ہدایت جاری کرے گی

ایس اواسی ایپ کے ڈائریکٹر مصطفیٰ احمد کا کہنا ہے کہ توقع ہے کہ یہ ایپ 23 مارچ 2020 کو کتوں ،بلیوں ،گدھوں اور دیگر مقامی جانوروں کے خلاف تشدد کے خاتمے کے لیے شروع کی جائے گی۔
لوگ خطرے میں پھسے جانوروں کا بالکل صحیح پتہ ریسکیو ٹیم کو نہیں بتا پاتے جس کی وجہ سے انہیں ریسکیو کرنے میں تاخیر ہوجاتی ہے۔
مصطفیٰ احمد نے کہا کہ اس ایپلیکیشن کو بنانے کا مقصد امدادی خدمات کومنظم انداز میں عمل میں لانے کو یقینی بنانا ہے، یہ ایپ زخمی جانوروں کی صحیح جگہ کا پتہ لگائے گی۔
اس ایپلیکیشن کو پتہ، قریبی جگہ، رابطہ نمبراورخطرے میں پھسے جانور کی تفصیلات درکار ہوں گی اور اس مقصد کے لیے رضاکاروں کو بھی تربیت دی جارہی ہے جبکہ اس سلسلے میں شناختی کارڈ اور موبائل نمبر پر مبنی تصدیق کا نظام بھی تیار کیا جارہا ہے۔
ایس اواسی ایپ کے ڈائریکٹر مصطفیٰ احمد کا کہنا ہے کہ یہ ایپ ابتدائی طور پر کراچی ،بدین ، بہاولپور ،لاہور اور اسلام آباد میں شروع کی جائے گی اور جلد ہی اسے دوسرے شہروں میں بھی متعارف کرایا جائے گا۔
اس ایپلیکیشن کو پتہ، قریبی جگہ، رابطہ نمبراورخطرے میں پھسے جانور کی تفصیلات درکار ہوں گی اور اس مقصد کے لیے رضاکاروں کو بھی تربیت دی جارہی ہے جبکہ اس سلسلے میں شناختی کارڈ اور موبائل نمبر پر مبنی تصدیق کا نظام بھی تیار کیا جارہا ہے۔
ایس اواسی ایپ کے ڈائریکٹر مصطفیٰ احمد کا کہنا ہے کہ یہ ایپ ابتدائی طور پر کراچی ،بدین ، بہاولپور ،لاہور اور اسلام آباد میں شروع کی جائے گی اور جلد ہی اسے دوسرے شہروں میں بھی متعارف کرایا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں

غیر منظورشدہ منصوبوں کے لیے آئندہ بجٹ میں کوئی رقم مختص نہیں کی جائے گی

غیر منظورشدہ منصوبوں کے لیے آئندہ بجٹ میں کوئی رقم مختص نہیں کی جائے گی

اسلام آباد: قائمہ کمیٹی کے اجلاس میں وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے بتایا کہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے