ہم مولانا فضل الرحمان کی گزشتہ پارلیمان کی تقریروں کی روشنی میں آگے بڑھ رہے ہیں

ہم مولانا فضل الرحمان کی گزشتہ پارلیمان کی تقریروں کی روشنی میں آگے بڑھ رہے ہیں

سیالکوٹ: پارلیمان اس وقت تک جعلی نہیں ہو سکتی جب تک مولانا فضل الرحمان کے فرزند اور ان کی جماعت کے دیگر رہنما ایوان میں براجمان ہیں

فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہنئے انتخابات ضرور کرائے جائیں گے لیکن پانچ سال کی آئینی مدت کی تکمیل کے بعد۔
ہم مولانا فضل الرحمان کی گزشتہ پارلیمان کی تقریروں کی روشنی میں آگے بڑھ رہے ہیں جب وہ کہا کرتے تھے کہ پارلیمان کو اپنی آئینی مدت پوری کرنی چاہیے۔

یہ بھی پڑھیں

معذور طلبا کی مشکلات حل کرنا پنجاب حکومت کی ترجیح کیوں نہیں

معذور طلبا کی مشکلات حل کرنا پنجاب حکومت کی ترجیح کیوں نہیں

 پنجاب: نہ تو ہماری بسیں چل رہی تھیں اور نہ ہی ہاسٹل کا میس اس …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے