فوجی عدالتوں کے فیصلوں سے دہشت گردی میں نمایاں کمی ہوئی، آرمی چیف

راولپنڈی: آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کا کہنا ہے کہ  فوجی عدالتوں کے فیصلوں سے دہشت گردی میں نمایاں کمی ہوئی جب کہ پاک فوج قومی سلامتی کے لیے تمام ریاستی اداروں سے تعاون جاری رکھے گی۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ کی سربراہی میں کورکمانڈرکانفرنس ہوئی جس میں قومی سلامتی سے متعلق امور اور پاک فوج کی آپریشنل تیاریوں کاجائزہ لیا گیا جب کہ آپریشن ضرب عضب کی کامیابیوں اورعالمی منظرنامے پرمرتب اثرات پراظہاراطمینان کیا گیا۔

ترجمان پاک فوج کے مطابق کانفرنس میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے دہشت گردی کے خاتمے کے لیے فوجی عدالتوں کی کارکردگی کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ فوجی عدالتوں کے فیصلوں سے دہشت گردی میں نمایاں کمی ہوئی، پاک فوج قومی سلامتی کے لیے تمام ریاستی اداروں سے تعاون جاری رکھے گی۔

 آرمی چیف نے ملک بھرمیں انسداد دہشت گردی آپریشن جاری رکھنے کا بھی اعلان کیا جب کہ افسران کو ہدایت کی کہ نقل مکانی کرنے والے افراد کی واپسی کے لیے ہرممکن کوششیں کی جائیں اور دہشت گردی سے پاک علاقوں میں استحکام برقرار رکھا جائے۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے اسٹریٹجک آرگنائزیشن کو بابر3 میزائل کے کامیاب تجربے پر مبارکباد بھی دی اور افسران سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مسلح افواج ہرقسم کی جارحیت کا مقابلہ کرنے کے لیے تیار ہے اور کسی بھی خطرے سے نمٹنے کی پوری صلاحیت رکھتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس 30 اگست کو طلب

پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس 30 اگست کو طلب

اسلام آباد: صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں کا مشترکہ اجلاس …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے