مسلمان لڑکیوں کو لڑکوں کے ساتھ تیرنا ہو گا

 

سوئٹزرلینڈ نے یورپی یونین کی عدالت برائے انسانی حقوق (ای ایچ سی آر) میں ایک مقدمہ جیت لیا ہے جس کے تحت مسلمان والدین کو اپنے بچوں کو لازمی طور پر مخلوط سوئمنگ پولز میں بھیجنا پڑے گا۔

فیصلے میں کہا گیا ہے کہ حکام بچوں کو معاشرے میں کامیاب طور سے جذب کرنے کی خاطر یہ حکم نامہ لاگو کرنے میں حق بجانب ہیں۔

ای ایچ سی آر نے تسلیم کیا ہے کہ اس کے تحت مذہبی آزادی میں مداخلت ہوئی ہے، تاہم ججوں نے کہا کہ یہ مذہبی آزادی کی خلاف ورزی کے زمرے میں نہیں آتا۔

یہ بھی پڑھیں

بھارت میں کورونا وائرس متاثرین کی تعداد چین سے زیادہ ہوگئی

نئی دہلی: بھارتی وزارتِ صحت کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں میں کورونا وائرس کے مزید …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے