شام میں کار بم دھماکہ،48افراد ہلاک

ترک سرحد سے ملحقہ باغیوں کے زیر کنٹرول علاقے میں کار بم دھماکے کے نتیجے میں 48افراد ہلاک جبکہ متعدد افراد زخمی ہوگئے

ترکی کی سرحد کے قریب باغیوں کے زیر کنٹرول شامی قصبے اعزاز‎‎ میں کار بم دھماکے کے نتیجے میں کم از کم48 افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

شام کے قصبے اعزار میں یہ دھماکہ عدالت کے باہر ہوا جو ترکی کی سرحد سے سات کلومیٹر کے فاصلے پر واقع ہے۔

یہ دھماکہ ایسے وقت ہوا ہے جب شام میں روس اور ترکی کی کوششوں کے باعث جنگ بندی پر عملدرآمد ہو رہا ہے۔

داعش نےشامی قصبے اعزاز پر 2013 میں قبضہ کیا تھا اور بعد میں اس سے قبضہ چھڑا لیا گیا تھا۔تاہم اس کے بعد سے دولت اسلامیہ نے کئی بار اس قصبے پر قبضے کی کوششیں کیں۔

یاد رہے کہ شام میں آئے دن دھماکے اور فائرنگ کے واقعات ہوتے رہتے ہیں،گزشتہ برس ستمبر میں ملک کے جنوبی صوبے دارا میں ایک پولیس اسٹیشن کی افتتاحی تقریب کے بعد کار بم دھماکے میں شامی حکومتی اپوزیشن کے وزیر سمیت 12 افراد ہلاک ہوئے تھے۔

شام میں 2011 میں صدر بشار الاسد کی انتظامیہ کے خلاف بغاوت کا آغاز ہوا،اس وقت سے اب تک شام میں خانہ جنگی جاری ہے جس میں 3 لاکھ سے زائد افراد ہلاک جبکہ لاکھوں معزور ہوچکے ہیں۔

 

یہ بھی پڑھیں

مقبوضہ کشمیر میں مظالم، کینیڈا کا بھارتی فوجیوں کو ویزہ دینے سے صاف انکار

مقبوضہ کشمیر میں مظالم، کینیڈا کا بھارتی فوجیوں کو ویزہ دینے سے صاف انکار

اوٹاوا: مقبوضہ کشمیر میں ہونے والے مظالم کے بعد کینیڈا نے سابق بھارتی فوجی افسران …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے