جرمنی: داعش سے تعلق اور حملے کی منصوبہ بندی کے الزام میں 3افراد گرفتار

جرمنی: داعش سے تعلق اور حملے کی منصوبہ بندی کے الزام میں 3افراد گرفتار

برلن : جرمنی کے مغربی شہر آفن بیچ میں پولیس نے داعش کے تین مشتبہ ارکان کو بم حملے کی منصوبہ بندی کے الزام میں گرفتار کر لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق جرمن پراسیکیوٹر ندڑا نائسن نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ گرفتار کیے گئے تینوں مشتبہ افراد ’رہین مین‘ کے علاقے میں حملے کی منصوبہ بندی کررہے تھے اور وہاں بدعقیدوں کو قتل کرنا چاہتے تھے۔

ان کا کہنا تھا کہ فوری طور پر ان کے کسی خاص ہدف کے بارے میں معلوم نہیں ہوسکا ہے۔

جرمن میڈیا کے مطابق پولیس نے آفن بیچ میں واقع تین مکانوں پر چھاپہ مار کارروائی کی تاہم انہیں وہاں سے ایسا کوئی ثبوت نہیں ملا جس نے مشتبہ افراد کے اہداف کےلیے کوئی جانکاری مل سکے۔

مس نائسن کا کہنا تھا کہ یہ مشتبہ افراد لوگوں کو یہ کہتے پائے گئے تھے کہ وہ داعش کے حامی ہیں اور پولیس ان تینوں کے بارے میں جانتی تھی۔

پولیس نے مرکزی مشتبہ ملزم کے مکان سے دھماکا خیز مواد اور آلات برآمد کیے ہیں،اس مواد کو بم کی تیاری میں استعمال کیا جاسکتا تھا۔

پولیس نے اس مکان سے بعض تحریری دستاویزات اور برقی ڈیٹا بھی قبضے میں لے لیا ہے،ان تینوں مشتبہ افراد یا صرف ان کے سرغنہ کو بدھ کو فرینکفرٹ میں ایک تفتیشی جج کے روبرو پیش کرنے کا فیصلہ کیا جائے گا۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق جج نے ان کے کیس کا جائزہ لینے کے بعد وارنٹ گرفتاری جاری کرنے اور قبل از ٹرائل زیر حراست رکھنے کا فیصلہ کرے گا۔

یارسان مذہب مشرقِ وسطیٰ کے سب سے قدیمی مذہبی عقیدوں میں سے ایک ہے

یہ بھی پڑھیں

روسی حکام نے غربت سے نبرد آزما شہر میں 3 لاکھ ڈالر کا کرسمس ٹری نصب کردیا

روسی حکام نے غربت سے نبرد آزما شہر میں 3 لاکھ ڈالر کا کرسمس ٹری نصب کردیا

ماسکو: سائبیریا کے ایک صنعتی شہر میں حکومت کی جانب سے کرسمس کے موقع پر …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے