اکرم درانی نےضمانت قبل از گرفتاری کے لیے ہائی کورٹ سے رجوع کرلیا

اکرم درانی نےضمانت قبل از گرفتاری کے لیے ہائی کورٹ سے رجوع کرلیا

اسلام آباد: اپنی درخواست میں اکرم درانی کا کہنا تھا کہ انہیں فریقین (نیب چیئرمین، ڈپٹی ڈائریکٹر اور تفتیشی افسر ندیم فراز) کی جانب سے نشانہ بنایا جارہا ہے حالانکہ وہ تعاون کررہے ہیں اور آگے بھی کرتے رہیں گے

جس رفتار سے تینوں تحقیقات جاری ہیں اس کو دیکھ کر لگتا ہے کہ انہیں آزادی مارچ سے پہلے ہی گرفتار کرلیا جائے گا۔
اکرم درانی کو وفاقی حکومت ہاؤسنگ فاؤنڈیشن کی 2 ہاؤسنگ اسکیم میں مبینہ بد عنوانی کے الزامات کا سامنا ہے اس کے علاوہ ان پر منظورِ نظر افسران کی تعیناتی، مسجد کے لیے ’خلافِ ضابطہ‘ پلاٹس مختص کرنا اور پاکستان پبلک ورکس ڈپارٹمنٹ (پی ڈبلیو ڈی) کا کام شامل ہے۔
درخواست گزار کا کہنا تھا کہ ان کا تعلق جے یو آئی (ف) سے ہے جو حکومت کے خلاف 27 اکتوبر کو آزادی مارچ کی سربراہی کررہی ہے‘ اور اس احتجاج کی تیاروں اور تعاون کے سلسلسے میں ایک رہبر کمیٹی بھی قائم کی گئی تھی۔
اپیل میں کہا گیا کہ ’درخواست گزار رہبر کمیٹی میں انتہائی اہم کردار ادا کررہے ہیں اور اس کمیٹی کے اجلاس میں اپنی پارٹی کی نمائندگی بھی کی لہٰذا ان تحقیقات کے پیچھے حکومت ہے جو ان کی سیاسی سرگرمیوں کو متاثر کرنا چاہتی ہے۔
اکرم درانی نے عدالت سے درخواست کی کہ ان کی ضمانت قبل از گرفتاری منظور کی جائے۔

یہ بھی پڑھیں

مولانا فضل الرحمان نے اسلام آباد میں 14 روز سے جاری دھرنا ختم کرنے کا اعلان کردیا

مولانا فضل الرحمان نے اسلام آباد میں 14 روز سے جاری دھرنا ختم کرنے کا اعلان کردیا

اسلام آباد: مولانافضل الرحمان نےکارکنوں سے خطاب کرتےہوئے کہا کہ نئےمحاذپرجانے کااعلان کردیاگیاہے،ہمارےجاں نثاراورعام شہری …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے