’نفرت انگیز‘ تقریر کرنے اور کارکنوں کو اشتعال دلانے کا الزام

’نفرت انگیز‘ تقریر کرنے اور کارکنوں کو اشتعال دلانے کا الزام

لاہور: کیپٹن (ر) صفدر کو اس وقت حراست میں لیا گیا جب وہ بذریعہ موٹروے بھیرہ سے واپس لاہور جارہے تھےپولیس نے ان کے خلاف 11 اکتوبر کو ریاستی اداروں کے خلاف بات کرنے پر مقدمہ درج کیا تھا

ترجمان مسلم لیگ (ن) نے ان کی گرفتاری کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کی ’فاشسٹ حکومت‘ اپوزیشن کی آواز دبانے کے لیے اوچھے ہتھکنڈوں پر اتر آئی ہے۔
مسلسل نفرت انگیز تقاریر کرنے پر سب سے پہلے عمران خان کو گرفتار کیا جانا چاہیئے‘۔
ان کا مزید کہنا تھا کہ جیسے جیسے’ آزادی مارچ‘ قریب آرہا ہے حکومت کے ہاتھ پاؤں پھول رہے ہیں۔
چند روز قبل 12 اکتوبر کو ہی لاہور کی سیشن عدالت نے پولیس ہاتھا پائی کیس میں کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر کی عبوری درخواست ضمانت کی تصدیق کی تھی۔
گزشتہ برس کیپٹن (ر) صفدر کو احتساب عدالت نے ایوین فیلڈ ریفرنس میں ایک سال قید کی سزا سنائی تھی۔
ایون فیلڈ یفرنس میں سابق وزیراعظم نوازشریف، مریم نواز، حسن اورحسین نوازکے علاوہ کیپٹن ریٹائرڈ صفدر ملزم نامزد تھے، جبکہ عدالت نے عدم حاضری کی بنا پر نواز شریف کے صاحبزادے حسن اور حسین نواز کو اشتہاری قرار دیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں

تحریک لبیک (ٹی ایل پی) کے سربراہ خادم حسین رضوی سمیت 26 ملزمان پر فرد جرم عائد

تحریک لبیک (ٹی ایل پی) کے سربراہ خادم حسین رضوی سمیت 26 ملزمان پر فرد جرم عائد

لاہور : توہین مذہب کیس میں آسیہ بی بی کی بریت کے فیصلے کے خلاف مذہبی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے