بلوچستان یونیورسٹی وائس چانسلر ڈاکٹر جاوید اقبال نے عارضی طور پر عہدے سے دستبردار

بلوچستان یونیورسٹی وائس چانسلر ڈاکٹر جاوید اقبال نے عارضی طور پر عہدے سے دستبردار

کوئٹہ: شفاف انکوائری کو یقینی بنانے اور یونیورسٹی آف بلوچستان کے وائس چانسلر کی درخواست پر گورنر جسٹس (ر) امان اللہ خان یسین زئی اور یونیورسٹی کے چانلسر نے ڈاکٹر جاوید اقبال کی درخواست منظور کرلی ہے کہ ایف آئی اے کی جانب سے اسکینڈل کی تحقیقات مکمل کیے جانے تک وہ اپنی ذمہ داریوں سے دستبردار رہیں گے‘

پروفیسر ڈاکٹر محمد انور پانیزئی کو تاحکم ثانی وائس چانسلر کے عہدے کا چارج دے دیا گیا۔
وفاقی تحقیقاتی ادارے کے حکام نے بتایا کہ یونیورسٹی کے کچھ عہدیداران اور ملازمین کے بیان ریکارڈ کرلیے گئے اور اس حوالے سے تیار کی جانے والی رپورٹ آخری مراحل میں ہے۔
بلیک میلنگ اور ہراسانی کا شکار ہونے والا کوئی بھی متاثرہ شخص اب تک ایف آئی اے کی تحقیقاتی ٹیم کے سامنے پیش نہیں ہوا، اس حوالے سے اب تک یونیورسٹی کے کسی عہدیدار یا ملازم کو گرفتار بھی نہیں کیا گیا۔
14 اکتوبر کو بلوچستان ہائی کورٹ کے چیف جسٹس جمال مندوخیل نے بلوچستان یونیورسٹی کے ملازمین کی جانب سے طلبہ کو ہراساں کرنے کی شکایات پر ازخود نوٹس لیتے ہوئے وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) کو رپورٹ جمع کرانے کی ہدایت کی دی تھی۔
ایف آئی اے نے بلوچستان یونیورسٹی کے تین افسران سے طلبہ کو ہراساں کیے جانے کے حوالے سے تفتیش کی۔

یہ بھی پڑھیں

6 نکاتی ایجنڈا بلوچستان کے سنگین مسائل کا حل ہے

6 نکاتی ایجنڈا بلوچستان کے سنگین مسائل کا حل ہے

کوئٹہ: بی این پی (ایم) کے سربراہ نے خدشات کا اظہار کیا کہ گزشتہ ایک …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے