ڈکیتیوں اور اسٹریٹ کرائم کے دوران مزاحمت پر قتل اور زخمی افراد کے اعداد و شمار

ڈکیتیوں اور اسٹریٹ کرائم کے دوران مزاحمت پر قتل اور زخمی افراد کے اعداد و شمار

کراچی: ضلع وسطی میں سب سےزیادہ 40 گھروں میں ڈکیتیاں کی گئیں، ڈسٹرکٹ ساؤتھ میں 36، ضلع شرقی کے 35، ملیر میں 33، کورنگی میں18 اور ضلع غربی میں 15گھروں میں ڈکیتی کی وارداتیں ہوئیں

4 ماہ کےدوران ڈاکوؤں کی فائرنگ سے جاں بحق ہونے والے افراد کی تعداد 17 ہے اور زخمی ہونے والوں کی تعداد 96 ہے۔
ضلع غربی اور ملیر میں ڈاکوؤں کی فائرنگ سے 6 ،6 افراد جب کہ ضلع شرقی میں 2 افراد جاں بحق ہوئے۔
اس کے علاوہ ضلع وسطی، سٹی اور ساؤتھ میں ایک ایک شہری ڈاکوؤں کی فائرنگ سےجاں بحق ہوا۔
سرکاری رپورٹ میں مزید بتایا گیا کہ ضلع کورنگی میں 4 ماہ کے دوران ڈاکوؤں کی فائرنگ سے 23 افراد زخمی ہوئے، ضلع غربی میں 22 ، ملیر میں 21، ضلع وسطی میں 12، ضلع شرقی میں 10، جنوبی میں5 اور ستی میں 3 افراد زخمی ہوچکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

ہم آئین کے برعکس کوئی کام نہیں ہونے دیں گے

ہم آئین کے برعکس کوئی کام نہیں ہونے دیں گے

کراچی: وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ شہر کی صفائی جاری …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے