کامیاب شادی کرسکتی ہے موٹاپے کا شکار

شادی تو وہ رشتہ ہے جس کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ یہ وہ لڈو ہے جو کھائے بچھتائے اور جو نہ کھائے وہ بھی پچھتائے مگر ایک پرمسرت تعلق آپ کو موٹاپے کا شکار بھی بنا سکتا ہے۔

یہ بات ایک طبی تحقیق میں سامنے آئی۔

امریکا کی فلوریڈا اسٹیٹ یونیورسٹی کی تحقیق کے مطابق اپنی شادی سے خوش جوڑوں میں جسمانی وزن بڑھنے کا امکان زیادہ ہوتا ہے۔

ماہرین کے مطابق اس کی وجہ یہ ہوسکتا ہے کہ لوگوں کے اندر اپنی شخصیت یا جسمانی وزن کے حوالے سے تشویش کم ہوجاتی ہے یا ان کی نظر میں اس کی زیادہ اہمیت نہیں رہتی۔

محققین کا کہنا ہے کہ جسمانی وزن کو معمول پر رکھنے کے طبی فوائد کو پیش نظر رکھ کر لوگ شادی کے بعد بھی موٹاپے کی روک تھام کرسکتے ہیں۔

ایک دوسری تحقیق کے مطابق اپنے شریک حیات کے ساتھ جسمانی سرگرمیاں جیسے ورزش کرنا بھی موٹاپے کی روک تھام میں مددگار ثابت ہوسکتا ہے۔

اسی طرح قدم سے قدم ملا کر چلنا بھی فائدہ مند سرگرمی ثابت ہوتی ہے۔

اس سے پہلے امریکا میں ہی ہونے والی ایک تحقیق میں یہ بات سامنے آئی تھی کہ میاں بیوی کے درمیان جتنا پیار بڑھتا ہے جسمانی وزن بھی اسی طرح تیزی سے بڑھتا ہے۔

اس کے مقابلے جو جوڑے ایک دوسرے سے زیادہ مطمئن نہیں ہوتے ان کا وزن بھی زیادہ نہیں بڑھتا۔

یہ بھی پڑھیں

منامہ کانفرنس کی ناکامی پر امریکا کی جانب سے اعتراف

منامہ کانفرنس کی ناکامی پر امریکا کی جانب سے اعتراف

مغربی ایشیا میں نام نہاد قیام امن کے بارے میں امریکی صدر کے خصوصی ایلچی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے