معاہدہ کر کے ملک سے فرار ہونے والا سیاسی قیدی نہیں

سینیٹ کے اجلاس میں اظہار خیال کرتے ہوئے سینیٹر اعتزاز احسن نے کہا کہ کل ملک میں ایک اور سیاسی قیدی ڈکلیئر ہو گا، جن کا ناکام وزیراعظم بطور جاسوس لیں تو 50 ہزار روپے دوں گا ، کلبھوشن یادیو کو بھی سیاسی قیدی ٹھہرایا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر عاصم کو 90 دن رینجرز، 90 دن نیب کی قید میں رکھا اور اب تاریخ میں مستند سیاسی قیدی پر بھی الزام لگایا جا رہا ہے ۔ بھٹو نے کہا میں تاریخ کے ہاتھوں مرنا نہیں چاہتا اس لئے انہوں نے اپنا راستہ تبدیل نہیں کیا اور بیٹی اور بیگم سے کہا میرے لئے معافی نہ مانگنا ، یہ شہادت ہوتی ہے، یہ سیاسی قیدی ہوتا ہے ، سیاسی قیدی وہ نہیں جو معاہدہ کر کے ملک سے فرار ہو جائے۔

یہ بھی پڑھیں

کوئلے سے چلنے والے بجلی گھر نے کامیابی سے کمرشل آپریشن کا آغاز کردیا

کوئلے سے چلنے والے بجلی گھر نے کامیابی سے کمرشل آپریشن کا آغاز کردیا

اسلام آباد: حکومت کی جانب سے تصدیق کردی گئی کہ اس بجلی گھر کو چائنا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے