کراچی: متحدہ کے رکن سندھ اسمبلی کامران فاروقی گرفتار

کراچی : ایم کیو ایم کے رکن سندھ اسمبلی کامران فاروقی کو قانون نافذ کرنے والے اداروں نے حراست میں لے لیا۔ کامران فاروقی پر ٹارگٹ کلنگ اور جرائم پیشہ افراد کو اسلحہ فراہم کرنے کے الزمات ہیں۔ تفصیلات کے مطابق کراچی میں قانون نافذ کرنے والے ادروں نے ایم کیو ایم کے رکن سندھ اسمبلی کامران فاروقی کو حراست میں لے لیا۔

ترجمان ایم کیو ایم پاکستان کے مطابق کامران فاروقی کو نارتھ ناظم آباد کی عارضی رہائش گاہ سے حراست میں لیا گیا۔ کامران فاروقی کو سندھ رینجرز نے اسپیکر سندھ اسمبلی کو تحریر کردہ خط کے ذریعے طلب کیا تھا۔

خط میں کہا گیا تھا کہ کامران فاروقی لیاری میں کام کرنے والی ٹارگٹ کلنگ ٹیم کا سربراہ رہا ہے اور مخالفین کو قتل کرنے کے احکامات جاری کرتا رہا۔ رینجرز کے خط کے مطابق کامران فاروقی مختلف پارٹیوں کے 142 افراد کی ٹارگٹ کلنگ، 2007 کی ہڑتال میں کنٹینرز جلانے، اسلحہ چھپانے اور اسلحہ ٹارگٹ کلرز کو فراہم کرنے میں ملوث رہا ہے۔

رینجرز کے خط پر اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی نے 27 اپریل کو کامران فاروقی کے نام خط لکھا اور انہیں ہدایت کی کہ 3 مئی کو رینجرز ہیڈکوارٹرز میں رپورٹ کریں۔

یکم مئی کو کامران فاروقی نے اسپیکر کو جوابی مراسلہ لکھا کہ وہ رینجرز ہیڈکوارٹرز میں پیش ہونے کو تیار ہیں مگر والدہ کی علالت کی وجہ سے تین مئی کو پیش نہیں ہوسکتے۔ 15 دن کی مہلت دی جائے تاہم کامران فاروقی کی پندرہ دن کی مہلت چھ ماہ کی روپوشی اختیار کرگئی۔

کامران فاروقی کی موجودگی کی اطلاع پر 8 جون کو ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ فاروق ستار کی رہائش گاہ پر بھی چھاپہ مارا گیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں

پہلی مرتبہ اقوامِ متحدہ کی سلامتی کونسل نے مسئلہ کشمیر پر بات کی

پہلی مرتبہ اقوامِ متحدہ کی سلامتی کونسل نے مسئلہ کشمیر پر بات کی

کراچی: عالمی تنظیم ایمنسٹی انٹرنیشنل نے ایک مرتبہ پھر بھارت سے مطالبہ کیا ہے کہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے