نیپالی پارلیمنٹ کے اسپیکر جنسی اسکینڈل پر عہدے سے مستعفی

نیپالی پارلیمنٹ کے اسپیکر جنسی اسکینڈل پر عہدے سے مستعفی

نیپال کی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے جنسی اسکینڈل کے الزام پر اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔

کٹھمنڈو پوسٹ نے نیپال کی پارلیمنٹ کے اسپیکر کرشن بہادر مہارا کے استعفی کے حوالے سے کہا ہے کہ میں اخلاقیات کی بنیاد پراستعفیٰ دے رہا ہوں تاکہ میڈیا میں آنے والے الزامات کی منصفانہ چھان بین ہوسکے جو میرے کردار پر سوال اٹھا رہے ہیں۔

کرشن بہادر مہارا نے حکمران نیپالی کمیونسٹ پارٹی کے ہنگامی اجلاس کے بعد استعفیٰ دے دیا جس میں یہ فیصلہ کیا گیا کہ ان سے اسپیکر اور رکن پارلیمنٹ کی حیثیت سے استعفی دینے کے لئے کہا جائے گا۔ اگرچہ وہ رکن پارلیمنٹ بنے رہیں گے۔

واضح ر ہے کہ سکریٹریٹ میں کام کرنے والی ایک خاتون نے اتوار کے روز کرشن بہادر مہارا پر عصمت دری کا الزام عائد کیا تھا۔ اس نے میڈیا کو بتایا کہ مسٹر مہارا شراب کے نشے میں اس کے گھر آئے اور اس کے ساتھ جنسی زیادتی کی تاہم پولیس کا کہنا ہے کہ اس خاتون نے ابھی تک کوئی ایف آئی آر درج نہیں کرائی ہے۔

144 کشمیری بچوں کو گرفتار کیا گیا، مودی سرکار کی بھارتی سپریم کورٹ میں تصدیق

یہ بھی پڑھیں

فرانس میں پنشن قوانین کے خلاف ملک بھر میں شٹر ڈاؤن رہا

فرانس میں پنشن قوانین کے خلاف ملک بھر میں شٹر ڈاؤن رہا

پیرس: فرانس میں پنشن قوانین کے خلاف ملک بھر میں شٹر ڈاؤن رہا، پندرہ لاکھ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے