شہر میں کچرا کنڈیاں بھی بکتی ہیں

کراچی : وزارت سے فائلوں کا غائب ہونا بھی عجیب بات ہے، ایک فائل گزشتہ ایک سال سے تلاش کر رہا ہوں، کوئی بھی وزیر یا چیئرمین آتا ہے اور کسی بھی این جی او کو 5 کروڑ روپے دے دیتا ہے

ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے علی زیدی کا کہنا تھا کہ شہر میں کچرا کنڈیاں بھی بکتی ہیں۔
انہوں نے کہا کہ ایف سی ایریا سے کچرا اٹھانے گئے تو ڈی ایم سی نے منع کر دیا۔
وزارت سے فائلوں کا غائب ہونا بھی عجیب بات ہے، ایک فائل گزشتہ ایک سال سے تلاش کر رہا ہوں، کوئی بھی وزیر یا چیئرمین آتا ہے اور کسی بھی این جی او کو 5 کروڑ روپے دے دیتا ہے۔
وفاقی وزیر نے کہا کہ بڑے صنعت کاروں نے سائٹ ایریا جانا چھوڑ دیا ہے، سڑکوں کی حالت اتنی خراب ہے کہ صنعت کاروں نے گھروں سے فیکٹریاں چلانا شروع کر دی ہیں۔
ڈسٹرکٹ ساؤتھ میں کوئی گاربیج ٹرانسفر اسٹیشن ہی نہیں، ڈیفنس میں بھی کوئی ایک گاربیج ٹرانسفر اسٹیشن نہیں ہے۔
ان کا کہنا تھا کہ امریکی قونصلیٹ کے قریب گاربیج ٹرانسفر اسٹیشن بنایا گیا تو قونصل جنرل میرے گھر آئے، مجھے کچرا کنگ بنا دیا گیا ہے جس پر ہنسی آتی ہے۔
علی زیدی نے بتایا کہ میرے اعداد وشمار کے مطابق سندھ حکومت کی طرف سے ایک دن میں 2 ہزار ٹن کچرا لینڈ فل سائٹ پر پھینکا جا رہا ہے، براہ راست کچرا لینڈ فل سائٹ پر پھینکنے پر فی ٹن ساڑھے 6 ڈالر خرچہ ہے جب کہ سندھ حکومت لینڈ فل سائٹ پر کچرا پھینکنے پر 28 ڈالر فی ٹن ادا کرتی ہے۔
وفاقی وزیر نے دعویٰ کہا کہ سندھ حکومت کی جانب سے لینڈ فل سائٹ پر کچرا کم پھینک کر چار گنا زائد ظاہر کیا جاتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

عمران خان کسی ایک شہرکی نہیں پورے ملک کی ترقی چاہتے ہیں

عمران خان کسی ایک شہرکی نہیں پورے ملک کی ترقی چاہتے ہیں

سکھر: پی ٹی آئی یوتھ ونگ کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے اسد عمر نے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے