بلڈ گروپ آر ایچ نیگیٹو ہے اور یہ اس قدر نایاب

بلڈ گروپ آر ایچ نیگیٹو اور یہ اس قدر نایاب

یہ افراد دنیا کے وہ 15 فیصد افراد ہیں جن میں اب تک معلوم شدہ خون کے نمونوں میں سے دنیا کا نایاب ترین نمونہ یا بلڈ گروپ پایا جاتا ہے، یہ بلڈ گروپ آر ایچ نیگیٹو ہے اور یہ اس قدر نایاب ہے کہ بعض اوقات یہ زمین سے الگ کسی اور سیارے کا پیدا کردہ لگتا ہے

ماہرین کے مطابق اس نایاب ترین بلڈ گروپ کے حامل افراد دیگر افراد سے ممتاز تو ضرور ہوتے ہیں تاہم ان میں قبل از وقت موت کے خطرات بہت زیادہ ہوتے ہیں، کیونکہ اگر یہ کسی حادثے کا شکار ہوجائیں تو پھر ان کے لیے بچنا ناممکن ہوتا ہے کیونکہ ان کا بلڈ گروپ آسانی سے نہیں مل سکتا۔
ایسے افراد کسی دوسرے شخص کو اپنا خون دے تو سکتے ہیں تاہم ان کا جسم کسی دوسرے قسم کا خون قبول کرنے سے انکار کردیتا ہے۔
آر ایچ نیگیٹو بلڈ گروپ رکھنے والے افراد حیران کن طور پر نمایاں جسمانی خصوصیات رکھتے ہیں۔  ان کے جسم کا درجہ حرارت قدرتی طور پر سرد ہوتا ہے اور یہ گرم درجہ حرارت برداشت نہیں کرسکتے۔
یہ افراد جسمانی، دماغی اور جذباتی طور پر بھی دیگر عام افراد سے مختلف ہوتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

فیس ماسکس سے کیسے وائرس کو پھیلنے سے روکنے میں کیسے مدد مل سکتی ہے

فیس ماسکس سے وائرس کو پھیلنے سے روکنے میں کیسے مدد مل سکتی ہے

وائرس سب سے پہلے ناک کے اندرونی نظام کو متاثر کرتا ہے اور پھر زیریں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے