ترکی نے اسرائیل کیلئے ایسے کام کر دیا کہ فلسطینی مسلمانوں کو بھی پریشان کر دیا

استنبول کی عدالت میں ان کیمرہ سماعت کے بعد متاثرین کے وکیل گولدن سونمیز نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر لکھا کہ چاروں کمانڈرز کیخلاف وارنٹ گرفتاری بھی واپس لے لیا گیا ہے۔

ہیومینیٹیرین ریلیف فاﺅنڈیشن تنظیم کے ترجمان مصطفی اوزبیک نے مقدمہ ختم ہونے کی تصدیق کی ہے۔ اس تنظیم نے 2010ءمیں غزہ کا اسرائیلی محاذ توڑنے کے سلسلے میں بولی کا اہتمام کیا تھا۔ اسرائیلی کمانڈروں کی جانب سے ماوی مرمارا جہاز پر دھاوے کے نتیجے میں 10 ترکی شہری اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے تھے۔ لیکن اس مقدمے کا خاتمہ جون میں ترکی اور اسرائیل کے باہمی تعلقات بہتر بنانے کے سلسلے میں طے پانے والے معاہدے کا مرکزی ستون ہے۔

یہ بھی پڑھیں

روس کا کیمیائی ہتھیاروں کی نابودی کے لیے لازمی اقدامات پر زور

روس کا کیمیائی ہتھیاروں کی نابودی کے لیے لازمی اقدامات پر زور

روس نے کیمیائی ہتھیاروں پر پابندی کے عالمی معاہدے کے رکن ملکوں کے درمیان تعمیری …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے