سعودی عرب کو اسلحے کی ترسیل پر پابندی برقرار رہے گی، جرمن حکومت

سعودی عرب کو اسلحے کی ترسیل پر پابندی برقرار رہے گی، جرمن حکومت

برلن :جرمن اسلحے کی سعودی عرب کو فراہمی پر پابندی میں توسیع کر دی ہےجرمن چانسلر کا کہنا ہے کہ مجھے حکومت کے مؤقف کی تبدیلی کا کوئی جواز دکھائی نہیں دے رہا۔

تفصیلات کے مطابق برلن حکومت کے ایک ترجمان نے بتایا کہ اب مارچ 2020ءتک ریاض حکومت کو کوئی ہتھیار اور عسکری ساز و سامان فروخت نہیں کیا جائے گا۔

جرمنی نے یہ پابندی گزشتہ برس اکتوبر میں سعودی حکومت کے ناقد صحافی جمال خاشقجی کے استنبول کے سعودی قونصل خانے میں قتل کے بعد لگائی تھی۔

جرمن چانسلر انجیلا میرکل کے بقول انہیں حکومت کے موقف کی تبدیلی کا کوئی جواز دکھائی نہیں دے رہا۔ اس پابندی کی مدت رواں برس تیس ستمبر کو ختم ہو رہی ہے۔

یاد رہے کہ جرمن حکومت نے سعودی صحافی جمال خاشقجی کے قتل میں ملوث ذمہ داروں کے فوری کارروائی کا مطالبہ کرتے ہوئے سعودی عرب کو اسلحے کی فروخت بند کرنے کا اعلان کیا تھا۔

خیال رہے کہ سعودی صحافی جمال خاشقجی دو اکتوبر کو استنبول میں سعودی قونصل خانے میں جانے کے بعد سے لاپتہ تھے، ترک حکام نے دعویٰ کیا تھا کہ خاشقجی کو سعودی قونصل خانے میں ہی قتل کرکے ان کی لاش کے ٹکڑے کردئیے گئے ہیں۔

بریگزیٹ معاملہ: یورپی پارلیمان نے برطانیہ کو مزید مہلت دے دی

یہ بھی پڑھیں

مائیں اپنی پسند کا لباس پہن سکتی ہیں

مائیں اپنی پسند کا لباس پہن سکتی ہیں

فرانس:سیاستدان کے رویے کی وجہ سے مسلم خاتون کے ساتھ بیٹھا ان کا بچہ بھی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے