کینیڈین وزیراعظم نے نسل پرستانہ فعل پر معذرت کرلی

کینیڈین وزیراعظم نے نسل پرستانہ فعل پر معذرت کرلی

اوٹاوا: کینیڈا کے وزیراعظم جسٹن ٹروڈو نے 18 سال قبل سرزد ہونے والے نسل پرستانہ فعل پر معذرت کرلی۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق کینیڈین وزیراعظم جسٹن ٹروڈو نے 18 سال قبل سیاہ فام کا روپ دھارے نسل پرستانہ عمل پر شرمندگی کا اظہار کیا ہے۔

سن 2001 میں ٹروڈو کینیڈا میں ایک اسکول میں بحیثیت معلم اپنی خدمات سر انجام دے رہے تھے جب انہوں نے سیاہ فام کا روپ دھارا تھا۔

جسٹن ٹروڈو کا کہنا ہے کہ وہ اپنے نسل پرستانہ عمل پر شرمندہ ہیں، تصویر کو اس وقت سامنے لایا گیا ہے جب کینیڈا میں 2019 کے انتخابات کی مہم شروع ہونے میں صرف ایک ہفتہ رہ گیا ہے۔

اوٹاوا میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ انسان غلطی ہوجاتی ہے اور ان کے اس عمل سے اگر کسی کی دل آزاری ہوئی ہے تو اس پر کھلے دل سے معافی چاہتے ہیں۔

کینیڈین وزیراعظم نے کہا کہ وہ نسل پرستی کے سخت خلاف ہیں اور کینیڈا کا وزیراعظم بننے کے بعد انہوں نے معاشرے میں نسلی ہم آہنگی پیدا کرنے کی بھرپور کوشش کی اور اس میں وہ کامیاب بھی رہے ہیں۔

کینیڈین وزیراعظم نے اپنے نسل پرستانہ عمل پر عہدے سے مستعفی ہونے سے انکار کردیا۔

ٹرمپ کے جھوٹے بیانات پر کانگریس کی رکن شدید برہم

یہ بھی پڑھیں

سمندری طوفان ہیگی جاپان کے ساحل سے ٹکرا گیا، ایک شخص ہلاک، متعدد لاپتا

سمندری طوفان ہیگی جاپان کے ساحل سے ٹکرا گیا، ایک شخص ہلاک، متعدد لاپتا

ٹوکیو: سمندری طوفان ہیگی نے جاپان میں تباہی مچادی جس کے نتیجے میں کئی شہروں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے