میٹرو بس کرایہ پالیسی کا الٹا اثر پڑنے لگا

میٹرو بس کرایہ پالیسی کا الٹا اثر پڑنے لگا

اسلام آباد: میٹرو بس میں سفر کرنے والے مسافروں کی تعداد یومیہ 20 ہزار جب کہ راولپنڈی/اسلام آباد میٹرو بس میں سفر کرنے والوں کی تعداد یومیہ 10 ہزار تک کم ہوگئی ہے

ہم دو میٹروپولیٹن شہروں میں بس کا کرایہ 20 روپے سے بڑھا کر 30 روپے کرکے پنجاب ماس ٹرانزٹ اتھارٹی (پی ایم ٹی اے) کے ریوینیو میں 8 سو ملین کے سالانہ اضافے کی توقع کررہے تھے تاہم یہ بہت حیران کن ہے کہ مسافروں کی تعداد روزانہ کی بنیاد پر لاہور میں 20 ہزار اور راولپنڈی/ اسلام آباد میں 10 تا 20 ہزار کم ہوئی ہے۔
ہمارے لئے یہ جاننا عجیب بات ہے کہ مسافر کرائے کے حوالے سے کتنا حساس ہوتا ہے۔ پی ایم ٹی اے کی انتظامیہ اس غیرمتوقع نتیجے پر رپورٹ تیار کر رہی ہے جسے ایک یا دو ہفتے میں متعلقہ حکام کو پیش کیا جائے گا۔
راولپنڈی/اسلام آباد میٹرو بس جڑواں شہروں کے رہائشیوں کیلئے نقل و حمل کے بڑے ذریعے میں سے ایک ہے۔ جڑواں شہروں میں اوسطاً 1 لاکھ 15 ہزار مسافر میٹرو بس استعمال کرتے ہیں تاہم کرایوں میں اضافے کے بعد 20 ہزار مسافروں نے میٹرو بس سے سفر کرنا چھوڑدیا ہے۔
اگر کسی شخص کو جڑواں شہروں میں اسٹاپ تا اسٹاپ سفر کرنا ہوتا ہے تو وہ میٹرو کو ترجیح دیتا ہے کیونکہ میٹرو اور دیگر پبلک ٹرانسپورٹ کے کرایوں میں تھوڑا فرق ہے لیکن میٹرو بس کے ٹکٹ کی قیمتوں میں اضافے کے باعث مسافروں کی اکثریت نے نقل و حمل کے دیگر ذرائع استعمال کرنا شروع کردئیے ہیں۔
میٹرو بس اتھارٹی پنجاب حکومت سے اس کے لاہور آپریشنز کے لئے 2.2 ارب روپے سبسڈی اور راولپنڈی/اسلام آباد آپریشنز کیلئے 1.9 ارب روپے کی سبسڈی لیتی ہے۔
وفاقی حکومت راولپنڈی/اسلام آباد کیلئے آدھی سبسڈی شیئر کرتی ہے تاہم موجودہ وفاقی حکومت نے میٹرو بس سبسڈی کیلئے ایک بھی پیسا نہیں دیا۔

یہ بھی پڑھیں

عدالت نے خواجہ برادران کی عائد جرم ختم کرنے کی درخواست بھی مسترد کردی

عدالت نے خواجہ برادران کی عائد جرم ختم کرنے کی درخواست بھی مسترد کردی

لاہور:احتساب عدالت میں پیراگون ہاؤسنگ کیس کی سماعت ہوئی جس سلسلے میں نیب نے خواجہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے