کشمیریوں پر جو ظلم ہو رہا ہے اس سے انتہاپسندی بڑھے گی،وزیراعظم عمران خان

مظفر آباد: وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ کشمیریوں پر جو ظلم ہو رہا ہے اس سے انتہاپسندی بڑھے گی اور کشمیریوں پر ہونے والے ظلم کا ردعمل آئے گا۔

مقبوضہ کشمیر میں جاری بھارتی دہشت گردی کے خلاف مظفرآباد میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ 40 روز سے کشمیری کرفیو میں پھنسے ہوئے ہیں، نریندر مودی جس میں انسانیت ہو وہ کبھی عورتوں اور بچوں پر ظلم نہیں کر سکتا تاہم مودی کبھی اپنے ارادے میں کامیاب نہیں ہوسکتا۔

کوئی بھی سمجھ دار آدمی جوہری جنگ کی بات نہیں کرسکتا

روزنامہ بشارت کےمطابق وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ کوئی بھی سمجھ دار آدمی جوہری جنگ کی بات نہیں کرسکتا، جوہری صلاحیت کے حامل ممالک کے درمیان کشیدگی کے خطرناک نتائج ہوسکتے ہیں، پاکستان بھارت کشیدگی ختم کرانے کے لیے دنیا کو

مداخلت کرنی چاہیے۔

وزیراعظم نے کہا کہ ساری دنیا میں کشمیر کا سفیر بن کر جاؤں گا اور دنیا کو بتاؤں گا، آرایس ایس کے بانی ہٹلر کو اپنا ہیرو مانتے تھے، آرایس ایس وہ جماعت ہے جس میں مسلمانوں کے خلاف نفرت بھری ہے، بھارت میں اقلیتوں کو برابر کا شہری نہیں سمجھا جاتا تاہم نریندر مودی تم کشمیریوں کو شکست نہیں دے سکتے، جس طرح ہٹلر نے ظلم کیا اسی طرح یہ بھی ظلم کر رہے ہیں اور اب وہ ہندوستان بننے جارہا ہے جو نہ نہرو چاہتا تھا نہ گاندھی چاہتے تھے۔

50 سال بعد سلامتی کونسل میں کشمیرکی بات ہوئی

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ 50 سال بعد سلامتی کونسل میں کشمیرکی بات ہوئی، 58 ملکوں نے پاکستان کے موقف کی حمایت کی، او آئی سی نے کہا کہ بھارت مقبوضہ کشمیر میں جاری کرفیو ختم کرے، آئندہ ہفتے نیویارک میں جنرل اسمبلی کے اجلاس میں مسئلہ کشمیر پر بات کروں گا۔ ان کا کہنا تھا کہ کہا کہ کشمیر کا مسئلہ بین الاقوامی مسئلہ بن چکا ہے، پوری دنیا کے سوا ارب مسلمان آج کشمیر کی طرف دیکھ رہے ہیں۔

 

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان نے بھارت کا جہاز گرایا،پائلٹ واپس بھجوانے پر مودی نے کہا دیکھو پاکستان ڈرگیا ہے، مودی کان کھول کر سن لو ایمان والا موت سے نہیں ڈرتا، بھارت کاپائلٹ ڈر کر نہیں امن کے لیے واپس کیا۔

کشمیریوں پر جو ظلم ہو رہا ہے اس سے انتہاپسندی بڑھے گی

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ کشمیریوں پر جو ظلم ہو رہا ہے اس سے انتہاپسندی بڑھے گی، ظلم پر ہر انسان ذلت کی زندگی پر موت کو ترجیح دیتاہے، اگر مجھے اس طرح بند کیا جاتا تو میں اس ظلم کے خلاف لڑتا، جب انسانوں کو دیوار سے لگا دیا جائے تو وہ انتہاپسندی کی طرف جاتے ہیں، آج سوا ارب مسلمان کشمیر کی طرف دیکھ رہے ہیں، کشمیر پر ہونے والے ظلم کا ردعمل آئے گا، مودی کو اینٹ کا جواب پتھر سے ملے گا، دنیا کو کہتا ہوں کہ ہندوستان کے ہٹلر کو روکے، یہ قوم آخری وقت تک تمہارا مقابلہ کرےگی۔

وزیراعظم نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کی بدترین صورتحال کے اثرات برصغیر کے باہر جاسکتے ہیں، دنیا کوایسی صورتحال سے بچنے میں مدد کرنے کے لئے مداخلت کرنی ہوگی، بھارت کی طرف سے مقبوضہ وادی کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کے بعد صورتحال بدتر ہوگئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

برطانوی شہزادہ ولیم اور ان کی اہلیہ آج پاکستان پہنچ رہے ہیں

برطانوی شہزادہ ولیم اور ان کی اہلیہ آج پاکستان پہنچ رہے ہیں

اسلام آباد: برطانوی شاہی جوڑے کے دورے سے متعلق شاہی محل نے رواں برس جون …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے