ہم کشميريوں کو کسی موڑ پر تنہا نہيں چھوڑيں گے،صدر مملکت

صدر مملکت عارف علوی نے نئے پارلیمانی سال کے موقع پر پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب میں کہا کہ ہم کشميريوں کو کسی موڑ پر تنہا نہيں چھوڑيں گے، امن کی کوشش کو ہماری کمزوری نہ سمجھا جائے۔

صدر مملکت عارف علوی نے کہا کہ بھارت مسلسل جنگ بندی معاہدوں کی خلاف ورزیاں کررہا ہے، پاکستان مظلوم کشميریوں کی نسل کشی برداشت نہيں کرے گا اور کشميريوں کی سفارتی، اخلاقی مدد جاری رکھے گا ۔

کشمير بھارت کااندرونی معاملہ نہيں ہے

انہوں نے کہا کہ کشمير بھارت کااندرونی معاملہ نہيں ہے ،مقبوضہ کشميرميں نسل کشی کی پاليسی اپنائی جارہی ہے، 90 لاکھ کشميريوں کی زندگی کو خطرات لاحق ہيں، کشمیریوں کی نسل کشی برداشت نہیں کی جائے گی۔

عارف علوی نے کہا کہ پاکستان ثالثی کی ہر کوشش کا خيرمقدم کرے گا جبکہ عالمی برادری کو اس سلسلے ميں کردار ادا کرنا ہوگا، مسئلہ کشميرکی سنگينی کو سمجھنے پر دوست ممالک سمیت چين کی کوششوں کا بھی تہہ دل سے شکريہ ادا کرتے ہيں۔

مسئلہ کشمير50سال بعد سلامتی کونسل اجلاس ميں زيربحث آنا کاميابی ہے

ان کا مزید کہنا تھا کہ حکومت نے کشمير کا معاملہ بھرپور طريقے سے اٹھايا جبکہ مسئلہ کشمير50سال بعد سلامتی کونسل اجلاس ميں زيربحث آنا کاميابی ہے۔

پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے صدر مملکت عارف علوی کے خطاب کے دوران اپوزیشن ارکان نے احتجاج کیا۔

خطاب کے دوران اپوزیشن ارکان اسپیکر ڈائس کے سامنے جمع ہوگئے، شور شرابا کیا اور حکومت کے خلاف نعرے لگائے۔

بھارت نے غیرقانونی اقدام سے عالمی معاہدے کی خلاف ورزی کی

بھارتی اقدامات کی شديد مذمت کرتے ہيں، بھارت نے غیرقانونی اقدام سے عالمی معاہدے کی خلاف ورزی کی، آج اگر دنیا نے نوٹس نہیں لیا گیا تو عالمی امن میں بہت بڑا بحران پیدا ہو جائے گا تاہم دنيا کو ہندو پسندانہ سوچ، فاشسٹ پاليسی کيخلاف مزاحمت کرنا ہوگی، ہندوستان ميں بسنے والی اقليتوں کیلئے يہ سوچ کسی آفت سے کم نہيں۔

ان کا کہنا تھا کہ کمانڈر کلبھوشن یادیو کو مارچ 2016ء سے گرفتار کیا گیا تھا، بلوچستان میں آنے کا مقصد تخریب کار اور دہشتگردی پھیلانا تھا، پاکستان کی فوجی عدالت نے کلبھوشن یادیو کو سزائے موت سنائی تھی،بھارت یہ معاملہ عالمی عدالت لے گیا جہاں اس کی درخواست کو مسترد کر دیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں

ڈیڈ لاک سے بچاؤ کے لیے مولانا فضل الرحمٰن کے ساتھ مذاکرات کرنے میں کوئی حرج نہیں

ڈیڈ لاک سے بچاؤ کے لیے مولانا فضل الرحمٰن کے ساتھ مذاکرات کرنے میں کوئی حرج نہیں

اسلام آباد: عمران خان کا حوالہ دے کر حکومتی ترجمان نے کہا کہ ’مولانا فضل …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے