بھارتی ممبر قانون ساز اسمبلی راج یادیو نے کم سن لڑکی کوزیادتی کا نشانہ بنا ڈالا

ممبئی (مانیٹرنگ ڈیسک)بھارتی ریاست بہار میں راشٹریہ جنتا دل کے ممبر قانون ساز اسمبلی راج بلابھ یادیو کیخلاف کم سن لڑکی سے جنسی زیادتی کے الزام میں مقدمہ درج کر لیا گیا ہے جبکہ اس کی گرفتاری کے احکامات بھی جاری کردیئے گئے ہیں۔

 بھارت کے ٹی وی کے مطابق زیادتی کی شکار کم سن لڑکی کی جانب سے ڈسٹرکٹ نالانڈا پولیس کو 6فروری کو شکایت کی گئی کہ سلیکھا دیوی نامی ایک خاتون بہار شریف سے کوئی 15کلو میٹر دور نامعلوم مقام پر لے گئی ۔ اس خاتون نے مجھے زبردستی شراب پلائی اور پھر ایک شخص نے مجھ سے جنسی زیادتی کی مجھے بعد میں پتہ چلا کہ یہ راج بلابھ یادیو ہے۔
بربریت اور بے حسی کی انتہا تو دیکھئے کہ بقول متاثرہ لڑکی جس دوران زیادتی کی جا رہی تھی اس دوران وہ خاتون بھی پاس ہی موجود رہی ۔اس بے حس خاتون نے کم سن لڑکی کو منہ بند رکھنے کے لئے 30ہزار روپے دیئے لیکن لڑکی نے گھر پہنچتے ہی اپنے والدین کو واقعہ سے آگاہ کر دیا جس کے بعد والدین اپنی بچی کو لے کر پولیس سٹیشن پہنچ گئے ۔ 
ابتدائی طور پر زیادتی کا کیس سلیکھا دیوی کے خلاف درج کیا گیا ۔پولیس کی تفتیش کے دوران جب کم سن لڑکی کو جائے وقوعہ پر لے جایا گیا تو اس نے راشٹریہ جنتا دل کے ممبر قانون ساز اسمبلی راج یادیو کے گھر کی نشاندہی کی اور جب وہ گھر میں داخل ہوئے تو لڑکی نے فوری طور پر زیادتی کرنے والے راج یادیو کی شناخت کر دی ۔ ڈی آئی جی پولیس نے کہا ہے کہ راج یادیو کو گرفتار کرنے کا حکم دے دیا ہے ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ایسا پہلی بار نہیں ہے کہ اس ایم ایل اے کے خلاف کریمینل کیس میں چارجز لگائے گئے ہوں۔

یہ بھی پڑھیں

امریکہ اور چین کے تجارتی مذاکرات ناکام

امریکہ اور چین کے تجارتی مذاکرات ناکام

چین کے دفتر خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ امریکہ اور چین کے تجارتی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے