ایف بی آر کو ماہانہ ٹیکس ہدف پورا کرنے میں 60 ارب روپے کی کمی

ایف بی آر کو ماہانہ ٹیکس ہدف پورا کرنے میں 60 ارب روپے کی کمی

اسلام آباد: ایف بی آر کو اگست 2019 میں 352 ارب روپے کا ہدف پورے کرنے میں 60 ارب روپے کے ریونیو کی کمی کا سامنا ہےکیوں اس سے اب تک رواں ماہ کے دوران 292 ارب روپے جمع کیے ہیں

جاری کیے گئے ریونیو کے ضمنی اعداد وشمار کے مطابق ایف بی آر نے رواں مالی سال کے ابتدائی دوماہ (جولائی اور اگست2019) میں مطلوبہ ہدف 644 ارب روپے کے مقابلے میں 576 ارب روپے جمع کیے یعنی مذکورہ مدت میں ایف بی آر کو 68 ارب روپے کی کمی کا سامنا رہا۔
اگست 2019 میں ایف بی آر کی مقامی ٹیکسز کے حوالے سے خالص نمو 17 اعشاریہ 5 فیصد رہی اس میں انکم ٹیکس، سیلز ٹیکس(مقامی)اور فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی (ایف ای ڈی)کی نمو 30 فیصد رہی تاہم درآمدات کے حوالے سے ٹیکس نمو 16فیصد منفی رہا ہے۔
چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی کا کہنا ہے کہ اگست 2019 میں ٹیکس ہدف 378 ارب روپے نہیں 350 ارب روپے سے کم تھا۔
جب کہ ایف بی آر رکن آئی آر پالیسی ڈاکٹر حامد عتیق سرور کا کہنا تھا کہ ایف بی آر کوشش کررہا ہے کہ ابتدائی دو ماہ کے دوران 600 ارب روپے ٹیکس جمع کیا جائے۔

یہ بھی پڑھیں

سینیٹر ڈاکٹر شہزاد وسیم کو سینٹ میں قائد ایوان نامزد

سینیٹر ڈاکٹر شہزاد وسیم کو سینٹ میں قائد ایوان نامزد

اسلام آباد: چیرمین سینٹ کی جانب سے جلد ڈاکٹر شہزاد وسیم کو بطور سینٹ میں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے