ججز کے ٹرانسفر یا ان کی پوسٹنگ سے متعلق کوئی بات چیت نہیں ہوئی

ججز کے ٹرانسفر یا ان کی پوسٹنگ سے متعلق کوئی بات چیت نہیں ہوئی

اسلام آباد: چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ جسٹس سردار شمیم خان سے ملاقات کی ہے تاہم ججز کے ٹرانسفر یا ان کی پوسٹنگ سے متعلق کوئی بات چیت نہیں ہوئی

فروغ نسیم نے بتایا کہ اس ملاقات کے دوران بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کے لیے مجوزہ قانون کے مسئلے پر تفصیلی گفتگو ہوئی تھی۔
ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ ان کی وزارت مذکورہ اصلاحات کے لیے متعلقہ ہائی کورٹس سے رواں برس جون سے رابطے میں ہے۔
فروغ نسیم نے واضح کیا کہ ججز کی منتقلی کا نوٹیفکیشن 26 اگست کو جاری کیا گیا جبکہ جبکہ ان کی اور چیف جسٹس کی ملاقات اس نوٹوفکیشن کے بعد ہوئی۔
انہوں نے یہ بھی واضح کیا کہ کسی بھی جج کو ہٹانے کے لیے ان کی وزارت کی طرف سے کوئی واٹس ایپ میسج نہیں کیا گیا۔
28 اگست کو ہی مسلم لیگ (ن) کے رہنما رانا ثنا اللہ کے خلاف منشیات برآمدگی کیس کی سماعت کے دوران جج نے واٹس ایپ پر احکامات موصول ہونے پر کیس کی مزید سماعت سے انکار کردیا۔
سماعت کے دوران جج مسعود ارشد نے کمرہ عدالت میں بتایا تھا کہ ’مجھے ابھی واٹس ایپ میسج موصول ہوا ہے اور ہائی کورٹ نے مجھے کام کرنے سے روک دیا ہے جبکہ میری خدمات بھی واپس کر دی گئی ہیں‘۔
رانا ثنا اللہ یا کسی کا بھی کیس ہوتا میرٹ پر فیصلہ ہونا تھا، تاہم اب لیگی رہنما کے خلاف کیس کی مزید سماعت نہیں کرسکتے۔

یہ بھی پڑھیں

ترنول میں چورنگی نمبر 26 پر نامعلوم افراد کی فائرنگ

ترنول میں چورنگی نمبر 26 پر نامعلوم افراد کی فائرنگ

اسلام آباد: جاں بحق اہلکاروں کی شناخت اسسٹنٹ سب انسپکٹر (اے ایس آئی) محسن ظفر …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے