شہر میں پانی کی قلت کا معاملہ بھرپور طریقے سے اٹھایا گیا

شہر میں پانی کی قلت کا معاملہ بھرپور طریقے سے اٹھایا گیا

کراچی: پی ٹی آئی کے رکن اسمبلی خرم شیر زمان نے اپنے ایک توجہ دلاؤ نوٹس کے ذریعے کہا کہ حب ڈیم بھرنے کے باوجود کراچی میں پانی کی دستیابی ممکن نہیں ہورہی، پانی کے بحران کا یہ عالم ہے لوگ تنگ آکر ہمارے گھروں اور کاروبار پر آکر کھڑے ہوجاتے ہیں

پانی کے اتنے مسائل ہیں ایم ڈی واٹر بورڈ سے مل مل کر تھک گئے۔ کراچی واٹر بورڈ کو فکس کرنا پڑے گا اگرپورے پاکستان میں کوئی سب سے ز یادہ کرپٹ ادارہ ہوگا تو یہ ہی ہے، اگر اینٹی کرپشن کچھ نہیں کرسکتی تو ہم نیب یا اینٹی کرپشن کو کہیں پھر کہا جائے گا کہ مداخلت کی جاتی ہے، خرم شیرزمان نے سوال کیا کہ واٹر بورڈ میں افسران کے کاروبار ہیں۔ واٹر ٹینکرز کے پیچھے کون لوگ ہیں؟
آخر ہم کہاں جائیں کیاخودکشی کرلیں، یہ مسائل کیسے حل ہونگے، افسر سالوں سے بیٹھے ہیں انہیں کوئی نہیں ہٹاتا، وزیر بلدیات سید ناصر حسین شاہ نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ واقعی پانی کی قلت کے سبب مسائل ہیں اور پانی جتنا ہے وہ اتنا بھی نہیں کہ پورے شہر کو پورا کیا جائے، واٹر بورڈ کا ایک نیا بورڈبنا رہے ہیں جس میں سب کو شامل کریں گے،دبئی میں ایک اجلاس کرکے آئے ہیں چاہتے ہیں سب لوگ آن بورڈ ہوں۔
وزیر بلدیات ناصر شاہ نے کہا کہ اورنگی میں ایشوز ہیں، 45 آنچ کی کچھ لائیں تبدیل کی ہیں اور مزید بھی کام کرارہے ہیں،کورنگی میں بارہ ہزار روڈ پر بھاری گاڑیوں کے سبب حادثات کے حوالے سے ہاشم رضا نے ایک توجہ دلاؤنوٹس پیش کرتے ہوئے کہا کہ کورنگی میں بھاری گاڑیوں کی وجہ سے حادثات معمول بن گئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

گزشتہ 24 گھنٹے میں کرونا وائرس کےسندھ میں مزید 699 کیسز کی تصدیق ہوئی ہے

گزشتہ 24 گھنٹے میں کرونا وائرس کےسندھ میں مزید 699 کیسز کی تصدیق ہوئی ہے

کراچی: وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کا کہنا ہے کہ سندھ میں 24 گھنٹے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے