انکم ٹیکس فائلر کی تعداد 25 لاکھ سے تجاوز کرگئی ہے، کوشش ہے کہ اس تعداد میں اضافہ ہو

انکم ٹیکس فائلر کی تعداد 25 لاکھ سے تجاوز کرگئی ہے، کوشش ہے کہ اس تعداد میں اضافہ ہو

کراچی: انکم ٹیکس فائلر کی تعداد 25 لاکھ سے تجاوز کرگئی ہے، کوشش ہے کہ اس تعداد میں اضافہ ہو، ایف بی آر ٹیکس دہندگان کو زیادہ سے زیادہ سہولیات کی فراہمی کی غرض سے انکم ٹیکس گوشوارے داخل کرنے کے مرحلے کو مزید آسان کررہا ہے

سیلز ٹیکس گوشوارے کی مانٹیرنگ کے لیے سافٹ وئیر متعارف کردیا ہے، سیلز ٹیکس سافٹ وئیر ٹیکس دہندگان پر عائد سیلز ٹیکس اور فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کا تعین کرے گا، سیلز ٹیکس گوشوارہ فارم آسان بنا کر ایک صفحے پر محیط کردیا ہے، کوشش ہے کہ سینٹرلائز سسٹم آجائے کہ کتنا پیسہ منتقل ہورہا ہے اس ضمن میں سروے کیے جارہے ہیں۔
ہم نے دکان داروں کو دوعلیحدہ اسکیموں کے بارے میں آگاہ کردیا ہے اور ان پر واضح کردیا ہے کہ بھاری مالیت کی فروخت پر قومی شناختی کارڈ کی شرط برقرار رہے گی، ٹیکس نیٹ بڑھانے کے لیے ڈاکٹرز انجینئرز اور تعلیمی اداروں کو بھی نوٹسزجاری کیے گئے ہیں اب جو بھی شعبہ قابل ٹیکس آمدنی کا حامل ہےاسے ٹیکس دینا ہوگا۔
انہوں نے کہا کہ بے نامی اثاثوں کی تلاش آسان نہیں ہے وہی بے نامی اثاثے سامنے آئے جن کے معاملات عدالت میں ہیں اور ایف بی آر بے نامی اثاثوں پر کارروائیوں کی رفتار مزید تیز کرے گا جبکہ وزیراعظم نے بے نامی اثاثوں کی تلاش کے لیے سخت احکامات جاری کیے ہیں۔
مینجمنٹ ایسوسی ایشن آف پاکستان کے سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے شبر زیدی نے کہا کہ ٹیکس ادا کرنے والے کو فارن کرنسی اکاؤنٹ کھولنے کی اجازت ہے، مختلف بیرونی ممالک میں 120 ارب ڈالر کی خطیر رقم غیر قانونی طریقے سے رکھی گئی ہے، ٹیکس ادا کرنے والے شہریوں کو پیسوں کی منقلی میں سہولت ہونی چاہیے،
بدقسمتی سے ماضی میں ایسا کوئی نظام نہیں تھا کوئی شخص رقم کا بڑا حصہ اندرون اور بیرون ملک قانونی طریقے سے بھیج سکے جو بھی سیلز ٹیکس ادا کرتا ہے صارف اسکی پکی رسید حاصل کریں۔

یہ بھی پڑھیں

طیارہ حادثہ ، ایئرٹریفک کنٹرولر شامل تفتیش

کراچی: پی آئی اے طیارہ حادثے کی تحقیقات کا عمل جاری ہے، ڈیوٹی پر موجود …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے