جامعہ کراچی نے مالی مشکلات کے پیش نظر سولر انرجی سسٹم کو فعال

جامعہ کراچی نے مالی مشکلات کے پیش نظر سولر انرجی سسٹم کو فعال

کراچی: جامعہ کراچی نے مالی مشکلات کے پیش نظر سولر انرجی سسٹم کو فعال کرنے کا فیصلہ کیا ہے جبکہ جامعہ کراچی کے دو ریسرچ سینٹرز میں سولر انرجی کا استعمال جاری ہے

جامعہ کراچی کے بیشتر شعبہ جات اور انتظامی بلاک میں بھی سولر انرجی کے استعمال پر کام شروع کیا جاِئے گا۔ سولر سسٹم کے بعد سے جامعہ کراچی کو مالی بحران کم کرنے میں مدد ملے گی۔
گزشتہ ماہ جامعہ کراچی کے شعبہ اپلائیڈ کیمسٹری اینڈ کیمیکل ٹیکنالوجی میں یونیورسٹی آف کراچی المنائی ایسوسی ایشن واشنگٹن ڈی سی بالٹی مور ایریا کی جانب سے لگائے جانے والے سولر پاورسسٹم کی افتتاحی تقریب کا انعقاد کیا گیا تھا۔
جس سے خطاب کرتے ہوئے جامعہ کراچی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر خالد محمود عراقی نے کہا کہ شمسی توانائی سے استفادہ کرنا وقت کی اہم ضرورت ہے۔
جدید دور میں توانائی کی عدم موجودگی میں ترقی کا تصور بھی نہیں کیا جا سکتا، توانائی معیشت کی ترقی کی اہم کنجی ہے، جامعہ کراچی ماہانہ تقریباً تین کروڑ روپے بجلی کے بل کی مد میں اداکرتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

سندھ اسمبلی کی ایک اور رکن میں کورونا کی تصدیق

سندھ اسمبلی کی ایک اور رکن میں کورونا کی تصدیق

کراچی: نماز جمعہ کے وقفے کے بعد سندھ اسمبلی کا اجلاس اسپیکر آغاسراج درانی کی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے