منصوبہ شروع کرنا چاہتے ہیں مگر پلاننگ کمیشن تعاون نہیں کر رہا

منصوبہ شروع کرنا چاہتے ہیں مگر پلاننگ کمیشن تعاون نہیں کر رہا

اسلام آباد: وزیراعظم نے پلاننگ کمیشن کو منصوبے کے پی سی ون کی منظوری کیلئے15ستمبر کی ڈیڈ لائن دے رکھی ہے تاہم کمیشن نیب سے خوفزدہ نظر آتا ہے

پراجیکٹ شروع نہیں کرنا چاہتا، پلاننگ کمیشن کے ارادے نیک نہیں اور وہ منصوبے پر دوسروں کو گمراہ کر رہا ہے۔
سی پیک پر کابینہ کمیٹی کا اجلاس وفاقی وزیر منصوبہ بندی خسرو بختیار کی صدارت میں ہوا۔ اجلاس میں شریک ذرائع نے بتایا کہ شیخ رشید پلاننگ کمیشن کی اس تجویز پر پریشان نظر آئے کہ مذکورہ منصوے کے 2.4ارب ڈالر کے فیز ون منصوبے کی لاگت کی تھرڈ پارٹی توثیق کرائی جائے۔
اجلاس کے دوران پلاننگ کمیشن نے تجویز دی کہ ایم ایل ون فریم ورک معاہدے کی پیپرا ( پبلک پروکیورمنٹ ریگولیٹری اتھارٹی) سے منظوری لی جائے۔ آئی ایم ایف کی پابندیوں کی وجہ سے حکومت کی ایم ایل ون جیسے بڑے منصوبے شروع کرنے کی صلاحیت متاثر ہوئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

دنیا نے گزشتہ سال فروری میں بھارتی جارحیت کا مظاہرہ دیکھا

اسلام آباد : وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ایل او سی پر حالیہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے