امریکا اور چین کے درمیان معاشی تناؤ میں اتار چڑھاؤ کا سلسلہ تاحال جاری
An F-16 jet fighter is washed on the tarmac at an air force base in Taiwan. The State Department has approved the sale of 66 fighter jets to the island.

امریکا اور چین کے درمیان معاشی تناؤ میں اتار چڑھاؤ کا سلسلہ تاحال جاری

واشنگٹن: امریکی صدر نے چین کے سخت حریف تائیوان کو ایف-16 طیارے فروخت کا حتمی فیصلہ کرلیا ہے

امریکا اور چین کے درمیان معاشی تناؤ میں اتار چڑھاؤ کا سلسلہ تاحال جاری ہے کچھ عرصے کی مثبت پیش رفت کے بعد ایک بار پھر دونوں عالمی قوتوں کے درمیان فاصلے بڑھتے ہوئے نظر آرہے ہیں اور اس بار وجہ درآمدی اشیاء کے ’ٹیرف‘ نہیں بلکہ ’تائیوان‘ ہے
چین کے سخت حریف تائیوان کو ایف-16 طیارے فروخت کا حتمی فیصلہ کرلیا ہے جس کے تحت امریکا تائیوان کو 8 بلین ڈالرز مالیت کے ایف-16 طیارے فروخت کرے گا۔ طیاروں کی تعداد 66 ہوگی جس کے لیے دونوں ممالک کے درمیان مذاکرات جاری تھے۔
امریکی سینیٹ کی خارجہ تعلقات کمیٹی کے چیئرمین کا کہنا تھا کہ جنگجو طیاروں سے تائیوان اپنی خودمختار فضائی حدود کا دفاع کرنے کی صلاحیت کو بہتر بنا سکے گا تاہم چین نے امریکا کے اس بیانیے پر شدید تنقید کی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

برطانیہ میں پندرہ جون سے دکانیں کھل جائیں گی

لندن: برطانوی حکومت نے ملک میں لاک ڈاؤن ختم کرنے کا اعلان کردیا وزیراعظم بورس …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے