سالانہ 6لاکھ روپے بجلی کا بل ادا کرنے والے دکانداروں کو سیلز ٹیکس رجسٹریشن میں لائیں گے

سالانہ 6لاکھ روپے بجلی کا بل ادا کرنے والے دکانداروں کو سیلز ٹیکس رجسٹریشن میں لائیں گے

اسلام آباد: ممبران لینڈ ریونیو پالیسی ڈاکٹر حامد عتیق سرور نے کہا کہ سالانہ 6لاکھ روپے بجلی کا بل ادا کرنے والے دکانداروں کو سیلز ٹیکس رجسٹریشن میں لائیں گے اور ٹیکس رجسٹرڈ افراد کی تعداد 4 لاکھ تک بڑھائیں گے

ممبر آئی آر آپریشنز سیما شکیل نے کہا کہ ایک لاکھ ’ہائی نیٹ ورتھ‘ والے افراد کو ٹیکس نیٹ میں لانے کے لیے نوٹسز جاری کردیے ہیں جبکہ مزید ایک لاکھ افراد کو نوٹس جاری کریں گے۔
نوٹسز کے اجرا کا عمل مرحلہ وار جاری رہے گا اور نوٹسز بینک سے رقوم نکلوانے سمیت معاشی سرگرمیوں کی بنیاد پر جاری کیے جائیں گے۔
اسی حوالے سے ممبر آئی آر پالیسی ڈاکٹر حامد عتیق سرور کا کہنا تھا کہ سیلزٹیکس رجسٹریشن والوں کی تعداد 3 سے 4 لاکھ تک بڑھائیں گے، جو اس وقت ڈھائی لاکھ ہے۔
سالانہ 6 لاکھ روپے یا اس سے زائد بجلی کا بل ادا کرنے والے، ایک ہزار مربع فٹ سے بڑی دکان والے، ریٹیلرز اورصنعتی کنکشنز رکھنے والوں کی سیلزرجسٹریشن ترجیح ہے۔
ممبر آئی ٹی ایف بی آر محمود اسلم کا کہنا تھا کہ سیلز ٹیکس رجسٹریشن میں لوگوں کو شکایات تھیں، تاہم سیلز ٹیکس رجسٹریشن کو آسان کردیا گیا ہے ، کوئی بھی شخص اپنے کمپیوٹر اورموبائل فون کے ذریعے سیلز ٹیکس رجسٹریشن کرسکتا ہے۔
انہوں نے بتایا کہ سیلز ٹیکس رجسٹریشن کے لیے کاغذات کو کم سے کم کردیا ہے۔
ان کا کہنا تھا کہ مینوفیکچررز کو مشینری اور بجلی کے بل کی کاپی ساتھ منسلک کرنا ہوگی، سسٹم کے ذریعے بینک اکاونٹس کی تصدیق کی جائے گی، رجسٹریشن کے بعد متعلقہ افراد کو 30 روز کے اندر نادرا ای سہولت مراکز میں بائیو میٹرک تصدیق کروانا ہوگی۔
بائیو میٹرک تصدیق نہ ہونے پر رجسٹریشن ان ایکٹو کردی جائے گی۔
ساتھ ہی ان کا کہنا تھا کہ بائیو میٹرک تصدیق کی وجہ سے شناختی کارڈ کا غلط استعمال ممکن نہیں رہے گا۔
ممبر آئی ٹی کا کہنا تھا کہ جعلی ای میلز کی روک تھام کے لیے سائبر کرائمز ونگ سے رابطہ کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

ایس او پیز پر عمل اور احتیاط کریں ، آپ محفوظ رہیں گے

اسلام آباد: وزیراعظم نے کہا ہے کہ کورونا جانے والا نہیں، ویکسین کی تیاری تک …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے