امریکی کانگریس کی دو مسلم ارکان کے خلاف صیہونی حکومت کے اقدام پر نینسی پیلوسی کی کڑی تنقید

امریکی کانگریس کی دو مسلم ارکان کے خلاف صیہونی حکومت کے اقدام پر نینسی پیلوسی کی کڑی تنقید

امریکی کانگریس کی اسپیکر نینسی پیلوسی نے امریکی کانگریس کی دو خاتون ارکان کو اسرائیل میں داخل ہونے سے روکنے پر نتن یاہو حکومت پر کڑی تنقید کی ہے۔

نینسی پیلوسی نے ایسو شیئیٹڈ پریس سے گفتگو کرتے ہوئے امریکی صدر ٹرمپ اور اسرائیل کے وزیر اعظم نتن یاہو کو امریکی کانگریس کی دو مسلمان خاتون اراکین پر اسرائیل میں داخل ہونے پر پابندی کا ذمہ دار قرار دیتے ہوئے ان کے اس قدام کو ان حکومتوں کی کمزوری سے تعبیر کیا۔

امریکی کانگریس کی مسلمان خاتون اراکین منجملہ الہان عمر اور رشیدہ طالب کو اسرائیل پر نکتہ چینی کرنے کی بنا پر مقبوضہ فلسطین میں داخل ہونے سے روک دیا گیا جبکہ امریکی صدر ٹرمپ نے نتن یاہو حکومت کے اس اقدام کی حمایت کی ہے۔

امریکی کانگریس کی یہ مسلم خاتون اراکین، مظلوم فلسطینیوں کے خلاف اسرائیل کے جرائم پر کڑی نکتہ چینی اور اسرائیل کے بائیکاٹ کی تحریک کی حمایت کرتی رہی ہیں۔

کابل میں شادی کی تقریب میں خودکش حملے میں 63 افراد ہلاک، 180 زخمی

یہ بھی پڑھیں

طالبان سے جنگ بندی افغان حکام نے سیکڑوں مزید طالبان قیدیوں کو رہا کردیا

طالبان سے جنگ بندی افغان حکام نے سیکڑوں مزید طالبان قیدیوں کو رہا کردیا

بگرام: کشیدگی میں یہ وقفہ تقریبا 19 سال کی جنگ میں دوسری مرتبہ سامنے آیا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے